fbpx

ہندوستان منصوبہ بندی کے تحت جموں وکشمیر کی معیشت کو ختم کررہا ہے, کشمیر یوتھ الائنس

اسلام آباد:پاکستان و کشمیر کی یوتھ تنظیمات پر مشتمل کشمیر یوتھ الائنس کے رہنماءوں نے مطالبہ کیا ہے کہ عالمی برادری جموں و کشمیر میں کشمیریوں کا معاشی قتل روکنے کیلئے اقدامات کرے،مودی سرکار کشمیریوں کی نسل کشی کے ساتھ جموں وکشمیر کا معاشی قتل کرنے کیلئے منصوبہ بندی کے تحت کام کررہی ہے ان خیالات کا اظہار کشمیر یوتھ الائنس کے رہنماءوں صدر ڈاکٹر سید مجاہد گیلانی،طہٰ منیب،پلوشہ سعید ،سیکرٹری جنرل رضی طاہر ،سیکرٹری انفارمیشن نوید احمد،حمزہ رافع،کوارڈنیٹر عبداللہ خلیل ،محمد اختر ودیگر نے جمعرات کو اپنے مشترکہ بیان میں کیا ۔ یوتھ رہنماءوں کا کہنا تھا کہ ایرانی سیبوں کی درآمد سے کشمیری سیبوں کی تجارت کو نقصان پہنچا ہے،ہندوستان جموں وکشمیر میں کشمیریوں کی نسل کشی تو کئی دہائیوں سے جاری رکھے ہوئے ہے مگر ابھی مودی سرکار کے حالیہ اقدامات نے کشمیری تاجروں کو پریشانی میں مبتلا کردیا ہے،عالمی برادری نے مودی سرکار کے ایسے ہتھکنڈوں کو نہ روکا تو جموں وکشمیر میں انسانی و معاشی المیہ جنم لے سکتا ہے،صدر کشمیر یوتھ الائنس ڈاکٹر سید مجاہد گیلانی نے مزید بتایا ایرانی سیب سے نہ صرف کشمیری سیب کی قیمتیں گر رہی ہیں بلکہ ایرانی سیب کی درآمد سے سیب میں نئی بیماریاں بھی پھیلنے کا خدشہ ہے،ایرانی سیب میں چار سو سے زائد بیماریاں پائی جاتی ہیں انہی بیماریوں کے سبب بیشتر ممالک نے ایرانی سیب درآمد کرنے سے انکار کیا ہے ۔