fbpx

بچی لاپتہ نہیں ہوئی بلکہ اس نے کیا کام کیا؟ عدالت میں انکشاف

بچی لاپتہ نہیں ہوئی بلکہ اس نے کیا کام کیا؟ عدالت میں انکشاف

سندھ ہائیکورٹ میں لاپتہ بچوں کی بازیابی سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی

وکیل درخواست گزار نے کہا کہ سندھ ہائیکورٹ کوششوں سے بہت سے بچے بازیاب ہوچکے ہیں، لاپتا بچہ ندا کی بازیابی سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کر دی گئی،رپورٹ مین کہا گیا کہ بچی کی بازیابی کے لئے تمام ماڈرن ڈیوائسز استعمال کررہے ہیں، تاہم کہیں سے بھی بچی ندا سے متعلق کوئی معلومات نہیں ملی ہیں،بچی ندا کی گمشدگی کا مقدمہ نیو کراچی تھانے میں درج کیا گیا ہے،

وکیل درخواست گزار نے کہا کہ ابھی بھی کچھ بچے لاپتا ہیں، عدالت نے استفسار کیا کہ درخواست 2011 سے زیر سماعت ہے؟ سرکاری وکیل نے کہا کہ پولیس و دیگر کی جانب سے جواب جمع کرادیا گیا ہے، زنیب الرٹ کے بعد مِسنگ بچوں کا معاملہ بھی دیکھا جارہا ہے،فوکل پرسن نے عدالت میں کہا کہ ہم نے جے آئی ٹیز کے دو سیشن کئے ہیں 14 بچے لاپتا تھے جن میں سے 13 باقی ہیں ،ایک بچی اسماء کے بارے میں پتہ چلا ہے کہ اس نے شادی کرلی ہے بچی اسماء کو اغواء نہیں کیا گیا ہے مزید بچوں کی تلاش سے متعلق کوششیں جاری ہیں ،

عدالت نے پولیس کو ہدایت کی کہ لاپتا بچوں کی بازیابی کوشش جاری رکھیں، عدالت نے حکم دیا کہ آئندہ سماعت پر پیش رفت رپورٹ پیش کریں، عدالت نے درخواست کی مزید سماعت 14 جولائی تک ملتوی کردی

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.