جولائی میں متوقع بارشوں کی شدت اور ممکنہ اثرات کے حوالے سے جامع رپورٹ جاری

شہری احتیاطی تدابیر اختیار کریں،جیسے کہ بجلی کے کھمبوں اور کمزور تعمیرات سے دور رہیں اور آبی گزرگاہوں پر گاڑی چلانے یا پیدل چلنے سے گریز کریں
0
62
UAE

اسلام آباد : این ڈی ایم اے کے نیشنل ایمرجنسیز آپریشن سینٹر نے جولائی کے مہینے کے دوران پاکستان کے مختلف علاقوں میں متوقع بارشوں کی شدت اور ممکنہ اثرات کے حوالے سے جامع رپورٹ جاری کی ہے۔

باغی ٹی وی : محکمہ موسمیات اور نیشنل ایمرجنسیز آپریشن سینٹر کی پیشگوئی کے مطابق خیبرپختونخوا میں مردان، مالاکنڈ اور ہزارہ ڈویژن کے مختلف مقامات پرجولائی کے تیسرے ہفتے میں ہلکی بارشیں جبکہ چوتھے ہفتے کے دوران موسلادھار بارش متوقع ہے،جولائی کے پہلے اور دوسرے ہفتے میں پنجاب میں لاہور، سرگودھا، فیصل آباد اور گوجرانوالہ کے اضلاع جبکہ اسلام آباد میں 15تا50 ملی میٹر بارش ہوگی جبکہ چوتھے ہفتے کے دوران راولپنڈی،اسلام آباد، لاہور، سرگودھا، گوجرانوالہ اور فیصل آباد میں شدید بارشیں متوقع ہیں، ڈی جی خان میں پہاڑوں سےاکٹھے ہو کر پانی سےساہیوال،ملتان اور بہاولپور میں موسلادھار بارش کےباعث سیلابی صورتحال پیدا ہوسکتی ہے۔

غزہ میں حماس کی حکومت کے مکمل خاتمے تک جنگ جاری رہے گی،نیتن یاہو

این ای او سی کی پیش گوئی کے مطابق سندھ کے اضلاع میرپورخاص، کراچی، حیدرآباد، نواب شاہ، لاڑکانہ اور سکھرمیں جولائی کے مہینے میں 30تا75 ملی میٹر بارش ہوگی جبکہ جولائی کے دوسرے اور چوتھے ہفتے میں شدید بارشیں متوقع ہیں،جولائی کے چوتھے ہفتے میں گلگت بلتستان کے ضلع استور اور آزاد جموں و کشمیر کے مختلف مقامات پر موسلادھاربارشیں متوقع جس کے باعث ندی نالوں میں سیلابی صورتحال پیدا ہونے کا خطرہ ہے،بارشوں کی شدت ندی نالوں میں سیلابی صورتحال، شہری سیلاب، پہاڑی علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ اورجھیلوں کے ٹوٹنے کے باعث سیلاب(GLOF)کا سبب بن سکتی ہیں۔

جنوبی کوریا میں بیٹری پلانٹ میں آتشزدگی،22 افراد جان بحق

تازہ ترین پیش گوئی کے پیش نظر این ڈی ایم اے نے صوبائی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز (پی ڈی ایم ایز)، ڈسٹرکٹ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹیز (ڈی ڈی ایم ایز) اور دیگر متعلقہ ذیلی اداروں کو الرٹ رہنے اور کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار رہنے کی ہدایت کرتے ہوئے محکموں کو ضروری مشینری کی پہلے سے تعیناتی اور حساس علاقوں میں متعلقہ عملے کی دستیابی کو یقینی بنانے کی بھی ہدایت کی ہے۔

مقامی انتظامیہ کو ہدایت جاری کی گئی ہے کہ وہ دریا کے کناروں اور اس سے ملحقہ نالوں کے قریبی رہائشیوں کو پانی کے بہاؤ میں متوقع اضافے کے بارے میں آگاہ کریں اور انخلاء کے منصوبوں کے مطابق نشیبی اور سیلاب زدہ علاقوں سے خطرے سے دوچار آبادیوں کے بروقت انخلاء کے لیے نظام کی تشکیل یقینی بنائیں، مزید برآں، شہری احتیاطی تدابیر اختیار کریں،جیسے کہ بجلی کے کھمبوں اور کمزور تعمیرات سے دور رہیں اور آبی گزرگاہوں پر گاڑی چلانے یا پیدل چلنے سے گریز کریں،کسان، مویشی مالکان، سیاح اپنی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے حفاظتی اقدامات یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ مقامی انتظامیہ کی جانب سے جاری ہدایات اور مشوروں پر عمل کریں۔

’پائریٹس آف دی کیریبین‘ کے اداکار شارک حملے میں جاں بحق

Leave a reply