fbpx

بہروز سبزواری نے تیکھے خلیل الرحمان کے بارے میں کہہ دی تیکھی بات

خلیل الرحمان کا شمار دور حاضر کے بہترین لکھاریوں میں ہوتا ہے ان کا لکھا ہوا ہر پراجیکٹ شائقین کے دل کو چھو لیتا ہے ماضی قریب میں ان کا لکھا ہوا ڈرامہ میرے پاس تم ہو کہ ڈائیلاگز بہت مشہور ہوئے۔لکھتے تو بہت اچھا ہیں لیکن ان کے بولنے کا انداز بہت تیکھا ہے کسی کو ناپسند کرتے ہیں تو شدید الفاظ میں اس کا اظہار کرتے ہیں اکثر و بیش تر اپنی ہی کہی ہوئی باتوں کی وجہ سے ان کو تنقید کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ان کے حوالے سے ہمیشہ ہنستے مسکراتے فنکار بہروز سبزواری سے ان کے حالیہ انٹرویو میں سوال کیا گیا سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگرخلیل الرحمان قمر رائٹر نہ ہوتے تو کسی سے یقینا پٹ رہے ہوتے ۔انٹرویو میں جو ان سے سوال کئے گئے اس کا پیٹرن یہ تھا کہ جن کے نام لئے

جائیں گے وہ اگر وہ نہ کررہے ہوتے جو وہ کررہے ہیںتو کیا کرتے ۔بہروز سبزواری کے خلیل الرحمان قمر کے حوالے سے اس جواب کو بہت پسند کیا جا رہا ہے بلکہ لوگ اس جواب سے محظوظ ہو رہے ہیں ، اس انٹرویو میں بہرو ز کے ساتھ ان کے پرانے ساتھی اور رشتہ دار جاوید شیخ بھی تھے۔ بہروزسبزاوی کا شمار بھی ایسے فنکاروں میں ہوتا ہے جو وہ سب بول دیتے ہیں جو ان کے دل میں ہوتا ہے وہ یہ نہیں سوچتے کہ کسی کو ان کی بات کیسی لگے گی۔ بہروز کافی عرصے سے ٹی وی کے پراجیکٹس میں کم کم نظر آرہے ہیں انہوں نے پی ٹی وی کے سنہرے دور میں لازوال کردار کئے ایسے کردار کہ جو آج تک لوگوں کے ذہنوں پر نقش ہیں ۔