ورلڈ ہیڈر ایڈ

بھارت: دلت نوجوان کو محبت پر ملی کڑی سزا

بھارتی ریاست اتر پردیش کے ہردوئی ضلع میں رہنے والے ایک دلت نوجوان کو اعلیٰ ذات سے تعلق رکھنے والی لڑکی سے محبت کرنے کی کڑی سزا مل گئی۔ ابھشنک پال نامی دلت نوجوان کو لڑکی کے والد نے زندہ جلا دیاجو بعد میں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ بتایا جاتا ہے کہ ابھشنک اپنے پڑوس میں رہنے والی شیوانی گپتا سے بے انتہا محبت کرتا تھا۔

بی جے پی رہنما امیت شاہ مسلمان،عیسائی اور دلتوں کے جانی دشمن ، کوئی پوچھنے والا نہیں ، یواین انسانی حقوق کونسل کی رپورٹ

بھارتی میڈیا کے مطابق شیوانی کے والد رادھے گپتا نے اپنے 4 ساتھیوں کے ساتھ مل کر ابھشنک کو چارپائی سے باندھ کر اس پر پٹرول چھڑک دیا۔ انھوں نے چارپائی کو آگ لگا دی جس کی وجہ سے ابھشنک بری طرح جھلس گیا۔ ملزم کے مطابق ”میں نے جو کچھ بھی کیا ہے وہ اپنی فیملی کی عزت بچانے کے لیے کیا ہے۔“

پولس اس پورے واقعہ کو آنر کلنگ سے جوڑ رہی ہے۔ واقعہ میں گپتا خاندان کی دو خواتین بھی شامل ہیں۔ رادھے گپتا اور اس کے دو دوست گرفتارہو چکے ہیں جبکہ دونوں خواتین فرار بتائی جا رہی ہیں۔

دوسری جب ابھشنک کے بارے میں اس کی ماں کو پتہ چلا تو اسے دل کا جان لیوا دورہ پڑا ۔ لکھنولے جاتے وقت ماں کی موت ہو گئی۔ پھر جب کچھ گھنٹے بعد ابھشنک نے بھی لکھنو جاتے ہوئے راستے میں دم توڑ دیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.