fbpx

بھارت کو مذاکرات کے لیے کیا کرنا ہوگا شاہ محمود قریشی نے بتادیا

بھارت کو مذاکرات کے لیے کیا کرنا ہوگا شاہ محمود قریشی نے بتادیا

باغی ٹی وی :وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر دونوں ممالک کے درمیان سب سے بڑا تنازعہ ہے . پاکستان نے بھارت سے مذاکرات سے کبھی انکار نہیں کیا، بھارت کو مذاکرات کے لئے سازگار ماحول پیدا کرنا ہوگا۔ امن کے لئے تصفیہ طلب مسائل کا حل نا گریز ہے۔دو ایٹمی ممالک کے مابین مسائل صرف بات چیت سے حل ہوسکتے ہیں ۔منگل کو دوشنبے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارتی وزیر خارجہ سے ملاقات شیڈول نہیں تھی،دن بھر میں اپنی ملاقاتوں میں مصروف رہا جبکہ بھارتی وزیر خارجہ اپنی معاملات میں الجھے رہے میں بھی ملاقاتوں میں مگن رہا۔

انہوں نے کہا کہ پاک بھارت تعلقات میں پیش رفت ہوئی ہے ۔لائن آف کنڑول میں 2003 کے سیز فائر معاہدے پر عمل کرنے پر اتفاق اچھی پیش رفت ہے ۔سیز فائر سے کشمیریوں کو فائدہ ہوگا ،کشمیری بھی سیز فائر کے فیصلے پر خوش ہیں۔وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارتی وزیر اعظم نے یوم پاکستان پر وزیراعظم عمران خان کو خط لکھا،بھارتی وزیر اعظم نے یوم پاکستان پر مبارکباد دی جبکہ وزیراعظم عمران خان نے بھارتی وزیراعظم کو خط کا جواب دیا ہے۔

عمران خان نے مبارکباد دینے پر بھارتی ہم منصب کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان نے خط میں امن کی خواہش کا اظہار کیا۔پاکستان بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک کے ساتھ امن سے رہنا چاہتا ہے، امن کے لئے تصفیہ طلب مسائل کا حل نا گریز ہے۔شاہ محمود قریشی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر دونوں ممالک کے مابین سب سے بڑا تنازع ہے ۔5اگست 2019 کے بھارتی اقدامات سے معاملات الجھے۔5اگست کے اقدامات سے بھارت کو کچھ حاصل نہیں ہوا ،بھارت جو حاصل کرنا چاہتا تھا کر نہیں پایا۔

پاکستان کی حکومت نے بھارت کے ساتھ تجارت کو کھول دیا ہے اس طرح دونوں ممالک نے ایک عرصے سے جاری کشیدگی کو کم کرنے کی طرف قدم اٹھایا ہے . جس کے بعد امید کی جارہی ہے کہ مزید اقدام بھی کیے جائیں‌گے .

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.