fbpx

بھارت میں 2 دلت بہنیں اجتماعی زیادتی کے بعد قتل،لاشیں درختوں سے لٹکا دیں

پولیس نےمجرموں کو گرفتار کرنےکےبجائےمقتول لڑکیوں پرالزام عائد کردیا

نئی دہلی: بھارت میں 2 دلت بہنوں کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کردیا گیا۔

باغی ٹی وی : بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست اترپردیش کے شہر لکھم پورکھیڑی میں 6 ملزموں نے 2 دلت بہنوں کواجتماعی زیادتی کے بعد قتل کردیا اور لاشیں درخت سے لٹکا دیں۔

عدالت میں طلاق کےلئےآئی بیوی کو شوہرنےگلا کاٹ کرقتل کردیا

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ دونوں دلت بہنوں کی لاشیں گھرسےایک کلومیٹر دور کھیت میں درخت سے لٹکی ہوئی ملیں پولیس نے دلت بہنوں سے اجتماعی زیادتی اور قتل کے مجرموں کو گرفتار کرنےکےبجائےمقتول لڑکیوں پرالزام عائد کردیا کہ وہ اپنی مرضی سے مجرموں کے ساتھ گئی تھیں۔

مقتول دلت بہنوں کی والدہ کی مسلسل فریاد پر بھی پولیس نے ایف آئی آر درج نہیں کی تاہم علاقہ مکینوں کے احتجاج پر پولیس نے رپورٹ درج کرکے 6 ملزموں کو حراست میں لینے کا دعویٰ کیا ہے۔

قبل ازیں بھارتی ریاست کرناٹکا میں شوہر نے عدالت میں بیوی کو گلا کاٹ کر مار دیا۔اطلاعات کے مطابق ریاست کرناٹکا کے ضلع ہاسن کے شہر ہولیناراسی پور کی فیملی عدالت میں شیواکمار (Shivakumar) اور اس کی بیوی چائیترا (Chaitra) کے درمیان طلاق کا معاملہ زیر غور تھا۔

اوکاڑہ :ضعیف بیوہ منیراں بی بی کےگھرمیں داخل ہوکر بااثرافراد کا تشدد

عدالت نے حسب روایت شادی کو بچانے کے لیے دونوں کو ایک اور موقع دیا تھا جوڑے نے کونسلنگ سیشن کے دوران اپنے اختلافات کو بھول کر پھر سے نئی شروعات کرنے پر رضامندی ظاہر کی تھی شیوا کمار نے اپنی بیوی چایئترا پر اس وقت حملہ کیا جب وہ عدالت کے واش روم گئی، شیوا کمار بیوی کے پیچھے گیا اور وہاں اس نے تیز دھار آلے سے بیوی کا گلا کاٹ دیا۔

واردات کے بعد ملزم نے فرار ہونے کی کوشش کی لیکن عدالت میں موجود افراد نے اسے پکڑ کر پولیس کےحوالے کردیا تھا جب کہ چائیترا کو شدید زخمی حالت میں اسپتال پہنچایا گیا تھاجہاں علاج کے دوران اس کی موت ہوگئی۔پولیس نے ملزم شوہر شیوکمار پر اپنی بیوی کے قتل کے الزام میں ایف آئی آر درج کرلی ہے۔

بلقیس بانو عصمت دری کیس،11 ملزمان کو رہا کر دیا گیا