fbpx

بجلی کی فی یونٹ قیمت میں مزید اضافہ کرکے 3 روپے39 پیسے مہنگی کردی گئی

بجلی کی فی یونٹ قیمت میں مزید اضافہ کرکے 3 روپے39 پیسے مہنگی کردی گئی ہے.

بجلی کی فی یونٹ قیمت میں مزید 3 روپے 39 پیسے کا اضافہ کردیا گیا۔ نیپرا نے بجلی کی فی یونٹ قیمت بڑھانے کی منظوری دے دی ہے۔ نیپرا نے بجلی کی قیمت سے متعلق سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کی درخواست کی سماعت کی۔ نیپرا نے بجلی کی قیمت میں 3 روپے 39 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دے دی۔ قیمتوں میں اضافہ کا اطلاق اکتوبر سے ہوگا اور یہ اضافہ نومبر اور دسمبر میں بھی وصول کیا جائے گا۔نیپرا نے بجلی کمپنیوں کو 95 ارب اضافی وصولیوں کی اجازت دے دی۔

صارف نے نیپرا سے کے الیکٹرک کی سماعت کیلئے زیادہ وقت مقرر کرنے کا مطالبہ کیا جس پرچئیرمین نیپرا نے جواب دیا کہ کے الیکٹرک کی سماعت پر بھرپور وقت دیا جاتا ہے۔ چئیرمین نیپرا کا یہ بھی کہنا تھا کہ کراچی کے صارفین اکثر جذباتی ہوجاتے ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ بھی مہنگائی اور بھاری بھرکم بجلی کے بلوں سے پریشان صارفین کی مشکلات میں مزید اضافہ کرتے ہوئے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی (نیپرا) نے ایک ماہ کے لیے بجلی مزید 4 روپے 34 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی منظوری دیدی تھی.
منظوری جولائی کی ماہانہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں دی گئی تھی، اضافے کا اطلاق کے الیکٹرک اور لائف لائن صارفین پر نہیں تھا، سینٹرل پاور پرچیزنگ ایجنسی (سی پی پی اے) نے بجلی 4 روپے 69 پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی درخواست کی تھی۔ نیپرا کی جانب سے بجلی مہنگی کرنے سے متعلق تفصیلی فیصلہ اور نوٹفیکیشن بعد میں جاری کیا گیا تھا.

اس وقت فیصلے سے متعلق نیپرا حکام کا کہنا تھا کہ میرٹ آرڈر کی خلاف ورزی سے 7ارب 42 کروڑ روپے کااضافی بوجھ پڑا، ایل این جی کی قلت سے 6 ارب 93 کروڑ روپے کا بوجھ پڑا۔ نیپرا حکام نے اضافے کی وجوہات سے متعلق مزید کہا تھا کہ بلو کی، چائنہ پاور پلانٹ، ہلمور، سفاہر پاور پلانٹ کی جگہ مہنگے پلانٹس چلائے گئے تھے۔ نیپرا حکام کا کہنا تھا کہ سی پی پی اے کی درخواست سے 35 پیسے کمی کی گئی.