fbpx

بلاول بھٹوسرکاری ملازمین سے اظہاریکجہتی کے لیےحکومت کے خلاف احتجاج میں‌ شریک

اسلام آباد:بلاول بھٹوسرکاری ملازمین سے اظہاریکجہتی کے لیےحکومت کے خلاف احتجاج میں‌ شریک،اطلاعات کے مطابق چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی ، بلاول بھٹو زرداری نے جمعہ کے روز پارلیمنٹ ہاؤس اسلام آباد کے باہر مظاہرہ کرنے والے سرکاری ملازمین کے ساتھ اظہار یکجہتی کیا۔

چیئرمین بلاول نے سرکاری ملازمین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پی ٹی آئی کی حکومت پاکستان کے عوام سے جھوٹ بولتی ہے اور وہ سرکاری ملازمین کے ساتھ کیے گئے وعدوں اور معاہدے کو پورا نہیں کرتی ہے۔ انہوں نے سرکاری ملازمین کے نمائندے سے ملاقات کی اور انہیں ان کے مطالبات کی حمایت کا یقین دلایا۔ انہوں نے کہا کہ وہ پارلیمنٹ میں بھی ان کے مطالبات اٹھائیں گے۔

چیئرمین زرداری نے میڈیا کو اس احتجاج کی کوریج پر ان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ میڈیا غریبوں کی آواز بن جائے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ میڈیا پی ٹی آئی حکومت کے آخری تین سالوں سے سرکاری ملازمین کے ساتھ ساتھ پاکستان کے غریب عوام کے ساتھ ہونے والی ناانصافیوں کو بے نقاب کرے گا۔

حکومت کا دعویٰ ہے کہ معیشت اتار رہی ہے اور ہم معاشی ترقی پر ہیں تو پھر سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیوں نہیں کیا گیا؟ پی ٹی آئی کی حکومت جھوٹ بولتی ہے اور پاکستان کے غریب عوام کے ساتھ ناانصافی کرتی ہے۔ پاکستان میں افراط زر نے کئی گنا اضافہ کیا ، غربت اور بیروزگاری نے پچھلے تین سالوں کے دوران غیرمعمولی اعلی سطح کوپہنچا۔ حکومت کو پوری دنیا میں وبائی امراض کے درمیان تنخواہوں میں زیادہ سے زیادہ سطح تک اضافہ کرنا چاہئے تھا۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے اپنے ادوار میں 13۔2008 میں تنخواہوں میں 120 فیصد اور پنشن 100 فیصد تک بڑھا دی تھی۔ حکومت کی ذمہ داری ہے کہ وہ ملک میں افراط زر کے تناسب کے ساتھ تنخواہوں میں اضافہ کرے۔ پیپلز پارٹی اور اپوزیشن کا مطالبہ ہے کہ عوام کو ریلیف فراہم کیا جائے اور ان ناانصافیوں کو مزید برداشت نہیں کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ انہوں نے سندھ حکومت کو ہدایت کی ہے کہ وہ کم سے کم اجرت 25 ہزار روپے مقرر کریں۔ ہم قومی اسمبلی میں پی ٹی آئی ایم ایف بجٹ کو روکنے کے لئے اپنی صلاحیت کے مطابق ہر کام کریں گے۔

چیئرمین بلاول نے کہا کہ اگر پی ٹی آئی ایم ایف کا یہ بجٹ اسمبلی میں منظور ہوتا ہے تو وہ ملک کے ہر گوشے اور گوشے میں جاکر پاکستان کے عوام کو بتائیں گے کہ وہ اس حکومت کی نااہلی اور نااہلی کی وجہ سے دوچار ہیں۔ پی ٹی آئی ایم ایف کے اس بجٹ کا بوجھ غریب آدمی اٹھا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عوام کی مشکلات صرف عوام کی حکومت ہی حل کرسکتی ہے۔ انہوں نے احتجاج کرنے والے ملازمین کو یقین دلایا کہ پیپلز پارٹی پی ٹی آئی ایم ایف کے اس بجٹ سے نجات کے لئے ایک مہم چلائے گی۔

صحافیوں کے سوال کے جواب میں ، چیئرمین بلاول نے کہا کہ ہم حکومت سے مطالبہ کررہے ہیں کہ ملازمین کے ساتھ کیے گئے معاہدے پر عمل کریں۔ حکومت کو تنخواہوں میں اضافہ کرنا چاہئے جیسے پی پی پی نے حکومت میں اپنے دور حکومت میں اضافہ کیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.