بلاول کے ساتھ گلگت میں موجود پیپلز پارٹی کی اہم شخصیت کرونا کا شکار

بلاول کے ساتھ گلگت میں موجود پیپلز پارٹی کی اہم شخصیت کرونا کا شکار

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول زرداری کے ہمراہ گلگت میں انتخابی مہم میں انکے ساتھ موجود پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما اور سابق وفاقی وزیر قمر زمان کائرہ کرونا وائرس کا شکار ہو گئے ہیں

قمر زمان کائرہ کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا جس کے بعد انہوں نے خود کو قرنطینہ کر لیا، قمر زمان کائرہ کا کرونا ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد پیپلز پارٹی کے دیگر رہنما بھی کرونا کا ٹیسٹ کروائیں گے جو گلگت میں انکے ساتھ رہے ہیں

یپلز پارٹی سینئررہنما قمر زمان کائرہ اس وقت انتخابی مہم کے سلسلے میں گلگت بلتستان کے دورے پر بلاول بھٹو زرداری کے ساتھ موجود تھے تاہم کورونا ٹیسٹ مثبت آنے پر وہ واپس اسلام آباد آگئے ہیں ۔ قمرزمان کائرہ نے 14روز تک اپنے آپ کو گھر میں قرنطینہ کر لیا ہے ۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کرونا کی دوسری لہر جاری ہے اور کرونا کیسز میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے،

این سی او سی کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں میں کرونا کے 1650 نئے مریض سامنے آئے جبکہ 9 اموات ہوئی ہیں، پاکستان میں کرونا مریضوں کی مجموعی تعداد3 لاکھ 44 ہزار839 ہوگئی ہے جبکہ کرونا سے اموات کی تعداد 6 ہزا ر 977 تک ہو گئی ہے،پاکستان میں کورونا کے 3 لاکھ18 ہزار881 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں اور 18 ہزار981 زیرعلاج ہیں،

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر نے پاکستان میں کورونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ماسک پہننا لازمی قرار دے دیا ہے۔شہری گھروں سے باہر نکلتے وقت ماسک لازمی پہنیں۔ حکومتی اور نجی سیکٹرز کے دفاتر میں کام کرنے والوں کے لیے ماسک پہننا لازم ہوگا۔صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ بازاروں، شاپنگ مالز، پبلک ٹرانسپورٹ، ریسٹورنٹس میں ایس او پیز اور ماسک کو لازم قرار دیں۔

پنجاب میں بھی دوبارہ کرونا کیسز میں اضافہ ہو سکتا ہے، خطرے کی گھنٹی

کرونا پھیلاؤ روکنے کے لئے این سی او سی کا عوام سے مدد لینے کا فیصلہ

کرونا وائرس ، معاون خصوصی برائے صحت نے ہسپتال سربراہان کو دیں اہم ہدایات

کرونا وائرس لاہور میں پھیلنے کا خدشہ، انتظامیہ نے بڑا قدم اٹھا لیا

معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ پاکستان میں کورونا وائرس کی دوسری لہر بتدریج شروع ہو چکی ہے۔ دوسری لہر سے نمٹنے کے لیے ایس اوپیز پر سختی سےعمل کرنا ہو گا۔ احتیاطی تدابیر پرعمل پیرا ہو کر ہم کورونا کی دوسری لہرسے نمٹ سکتے ہیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.