ورلڈ ہیڈر ایڈ

بی جے پی لیڈر نے مستعفی ہونے والے بھارتی آفیسر سینتھل کو کس ملک میں جانے کا مشورہ دے دیا؟

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے رہنما اننت کمار ہیگڈے نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و بربریت کے خلاف استعفیٰ دینے والے بھارتی آفیسر (آئی اے ایس) سسی کانت سینتھل کو پاکستان جانے کا مشورہ دے دیا۔
مودی حکومت سے اختلاف، ایک اور آئی اے ایس افسر مستعفی
سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک ویڈیو پیغام میں سابق بھارتی وزیر اننت کمار نے کہا کہ حکومت اور پارلیمنٹ کی اکثریت کی بنیاد پر کیے جانے والے فیصلے پر سوال اٹھانے والے آئی اے ایس افسر سے بڑا کوئی ” غدار ” نہیں ہوسکتا ۔

اننت کمار نے کرناٹک کے آئی اے ایس افسر کے استعفی کو "تکبر کا فعل” قرار دیا۔

یاد رہے کہ سینتھل نے 6 ستمبر کو ہندوستانی حکومت کو یہ کہتے ہوئے استعفیٰ دے دیا تھا کہ مجھے لگتا ہے کہ بطور سول سرونٹ کام جاری رکھنا غیر اخلاقی ہے جبکہ جمہوریت کے بنیادی اصولوں سے سمجھوتہ کیا جارہا ہے۔

اس سے پہلے گذشتہ ماہ مقبوضہ کشمیر میں عائد کرفیو کی وجہ سے ایک اور آئی اے ایس آفیسر کنن گوپناتھن نے ملازمت سے استعفیٰ دے دیا تھا۔جبکہ جنوری میں مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے آئی اے ایس آفیسر شاہ فیصل نے مقبوضہ کشمیر میں ہونے والی ریاستی دہشت گردی کے خلاف احتجاجاً استعفیٰ دے دیا تھا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.