نیلا ٹویٹر ٹرینڈ کیا ہے؟

پاکستان سمیت دنیا بھر میں پھیلے کورونا وائرس کے باعث گزشتہ کئی ہفتوں سے لاک ڈاؤن نافذ ہے اور لوگ فارغ اوقات میں سوشل میڈیا پر اپنے آپ کو مصروف رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں سوشل میڈیا پر بلیو ٹویٹر چیلنج ٹرینڈ خاصا مقبول ہورہا ہے اس چیلنج میں آپ کو بلیو رنگ کی کوئی تصویر شئیر کرنی ہے یہ ٹرینڈ کا مقصد حقیقت میں کوڈ 19 کے دوران مریضوں کی دیکھ بھال کرنے والے طبی عملے کو خراج تحسین پیش کرنا ہے

باغی ٹی وی : گذشتہ روز اتوار سے ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ پر ہے ’بلیو ٹویٹر‘ ہیش ٹیگ کا استعمال کرتے ہوئے صارفین نے اس ٹرینڈ میں حصہ لیا ہے نیلا رنگ کیوں؟ یہ بلیو ٹرینڈ کورونا وائرس وبائی امراض کے خلاف جنگ لڑنے والوں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے ، صارفین نیلے رنگ کے لباس پہنے ہوئے اپنی تصویریں شئیر کر کے اس ٹرینڈ کا حصہ بن رہے ہیں اس رنگ سے یہ بھی پتہ چلتا ہے کہ وائرس پر قابو پانے اور لوگوں کی جان بچانے کے لئے ڈاکٹرز اور طبی عملہ بغیر رکے مسلسل فرنٹ لائن پر اپنے فرائض سر انجام دے رہے ہیں

عالمی وباء میں فرنٹ لائن پر مریضوں کی دیکھ بھال کے دوران جب ڈاکٹرز اور طبی عملہ گاؤن اور ماسک کے حفاظتی سامان (پی پی ای) پہنتے ہیں اور نیلے رنگ کے ملبوس نظر آتے ہیں # بلیو ٹویٹر کے ساتھ ہیش ٹیگ کے ساتھ تصاویر پوسٹ کرکے لوگوں کا ان کے شانہ بشانہ کھڑا ہونا ہے

اس ٹرینڈ کا آغاز 26 اپریل کو سوشل میڈیا پر سامنے آیا جس میں صارف نے لوگوں سے نیلے رنگ کی تصویر شیئر کرنے کے لیے کہا تھا اس کے بعد دیکھتے ہی دیکھتے یہ ٹرینڈ سوشل میڈیا پر بے حد مقبول ہوگیا اور لوگوں نے اس ٹرینڈ میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا


فیصل حسین نامی صارف نے پاکستان پیپیلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرادری کے ساتھ لی گئی تصویر شئیر کی جسمیں نے بلاول بھٹو زرداری نے نیلا لباس زین تن کر رکھا ہے صارف نے اس تصویر کو اپنی زندگی کی اعلی تصویر قرارد دیا


عثمان اعوان نامی صارف نے ترکی کی مشہور معروف اور اعلی شاہکار بلیو مسجد کی تصویر شئیر کی


اقرا بٹ نامی صارف نے محترمہ مرحومہ بینظیر بھٹو اور بلاول بھٹو زارداری کی نیلے لباس میں ملبوس تصاویر کا کولاج شئیر کیا


واصل بٹ نامی صارف نے وزیراعظم عمران خان کی نیلے لباس میں ملبوس تصویر شئیر کر کے اس ٹرینڈ میں حصہ لیا اور لکھا کہ عمران خان نیلے رنگ کے لباس میں ہمیشہ اچھے دکھتے ہیں


ایک صارف سیرندھا نے اپنی نیلے لباس میں تصاویر شئیر کیں اور لکھا کہ بلیو رنگ کے کئی شیڈز ہیں اور تمام ہی پیارے ہیں


ڈاکٹر چمپا نامی صارف نے کورونا کے خلاف ڈیوٹی کے دوران لی گئی اور کورونا سے پہلے کی ڈیوٹی کے دوران لی گئی تصاویر شئیر کیں اور لکھا کہ کوئی فرق نہیں میرے لئے ہر دن ہی نیلا ہے


آروحی نامی صارف نے بالی وڈ اداکارہ کترینہ کیف کی بلیو لباس میں ملبوس تصاویر شئیر کر کے اس ٹرینڈ کا حصہ بنیں


شیوم نامی صارف نے سلمان خان کی نیلے لباس میں ملبوس تصویروں کا کولاج شئیر کیا اور لکھا کہ اس سے پہلے کبھی بلیو رنگ اچھا نہیں دکھا


سیاسی مبصرہ کالم نگار اینکر سونندہ واشست بھی اس ٹریںڈ کا حصہ بنتے ہوئےنے نیلے لباس میں ملبوس اپنی تصاویر شئیر اور لکھا کہ دہائیاں آئی اور چلی گئیں ، بلیو مستقل ساتھی رہا


ڈاکٹر سوراو نامی صارف نے اپنی ڈیوٹی کے دوران لی گئی تصاویر شئیر کیں اور لکھا کہ میرے بلیو رنگ میں مختلف شیڈز


بھارتی خبر رساں ادارے کی ایگزیکٹیو ایڈیٹر انجنا اوم کشیپ نے نیلے لباس میں ملبوس اپنی ایک مختصر ویڈیو شئیر کی اور لکھا کہ زندگی ابدی ہے اور اسی طرح انسانی روح بھی !


مہارزشٹرا بی جے پی کی وایس پریذیڈینٹ چترا کیشوروگ نے نیلی ساڑھی میں ملبوس تصویر شئیر کر کے اس ٹرینڈ میں حصہ لیا


ڈاکٹر گنیش چوہدری نامی صارف نے اپنی ایک تصویر شئیر کی اورلکھا لاک ڈاؤن آپریشن تھیٹر میں


ایک صارف نے بھارت کا مشہور جرنلسٹ روش کمار کی نیلے رنگ کے لباس میں تصویر شئیر کی اور لکھا کہ جرنلسٹ کے میدان کا اصلی ہیرو

واضح رہے کہ اس ے پہلے سوشل میڈیا پر Me At 20 چیلنج کا آغاز 13 اپریل کو 202 نیٹ نامی ٹوئٹر ہینڈل سے کیا گیا تھا ٹرینڈ خاصا مقبول ہوا تھا اس چیلنج میں لوگوں اس وقت کی تصویر شیئر کرنی تھی جب وہ 20 برس کےتھے اس کے بعد دیکھتے ہی دیکھتے یہ ٹرینڈ سوشل میڈیا پر بے حد مقبول ہوگیا تھا اور پاکستان سے بھی کئی مشہور شخصیات نے اپنی پرانی تصاویر شیئر کیں تھیں جن پر صارفین کی جانب سے دلچسپ اور مزاحیہ تبصرے کیے گئے تھے

ً Me At 20 چیلنج میں معروف شخصیات کی تصاویر پر صارفین کے دلچسپ تبصرے

Me At 20 چیلنج ہمایوں سعید کی تصویر پر مداحوں کے دلچسپ تبصرے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.