fbpx

باکس آفس کوئین مہوش حیات لیکن پھر بھی نمرون ہیروئین ماہرہ خان کیوں؟

اداکارہ ماہرہ خان جنہوں نے ڈرامہ سیریل ہمسفر سے شہرت کی بلندیوں کو چھوا ان کی شہرت پاکستان سے نکل کر ہمسایہ ملک بھارت میں بھی پہنچی. یہاں تک کہ بالی وڈ کنگ کہلائے جانے والے شاہ رخ خان نے خود ان کو اپنے ساتھ فلم کرنے کی آفر کی اور ماہرہ خان نے رئیس نامی فلم کی بھی، ماہرہ خان کے کیرئیر اور زندگی کا یہ وہ موڑ تھا جس نے انہیں بڑی ہیروئین بنا دیا کیونکہ شاہ رخ خان کے ساتھ کام کرنا کوئی چھوٹی بات نہ تھی. ماہرہ خان کے کیرئیر پر نظر ڈالیں تو ان کی ایک آدھ فلم سپر ہٹ ہوئی اس کے علاوہ ان کی ہر دوسری فلم نے باکس آفس پر خاطر خواہ بزنس نہیں‌کیا دوسری طرف مہوش حیات کو دیکھیں تو

ان کی تقریبا سبہی فلموں نے اچھا بزنس کیا ان کی اب تک کی فلموں‌کا بزنس اگر کل ملا کر دیکھیں تو دو ارب کے قریب بنتا ہے اور ماہرہ خان کی اب تک کی تمام فلموں‌کا بزنس مشکل سے ایک ارب بھی نہیں بنتا.اس کے باوجود ماہرہ خان کو نمبر ون ہیروئین کہا جاتا ہے اور ان کو ہر دوسرے پراجیکٹ کا حصہ بنایا جاتا ہے. جتنے بھی بڑے بینرز ہیں وہ ماہرہ خان کو لیکر نہ صرف ڈرامہ،کمرشل ،فلم بنانے میں دلچپسی رکھتے ہیں بلکہ فلاپ فلمیں دینے کے باوجود وہ زیادہ چارج کرنے والے فنکاروں میں ماہرہ شامل ہیں. سمجھ سے بالا تر ہے کہ مہوش حیات جیسی اداکارہ جو باکس آفس کوئین ہے اس کی برابری میں فلاپ فلمیں دینے والی ماہرہ خان کو کھڑا کیوں کیا جاتا ہے.