fbpx

برٹش ایئرویز کا لاہور کے لیے اپنا فلائٹ آپریشن بند کرنے کا اعلان

لاہور:برٹش ایئرویز کا لاہور کے لیے اپنا فلائٹ آپریشن بند کرنے کا اعلان ،اطلاعات کے مطابق برٹش ایئرویزلاہور کے لیے اپنے شروع ہونے کے صرف 16 ماہ بعد 27 فروری 2022 سے لاہور، پاکستان سے لندن، ہیتھرو کے لیے اپنا فلائٹ آپریشن بند کرنے کا اعلان کیا ہے،

تفصیلات کے مطابق برٹش ایئرویز نے لاہور سے ہیتھرو روٹ کی بکنگ بند کر دی ہے اور اس کی ویب سائٹ میں فروری 2022 کے بعد کی کوئی بکنگ نہیں دکھائی دے رہی ۔ ایوی ایشن رپورٹر طاہر عمران میاں نے بھی اس حوالے سے ٹویٹ کرتے ہوئے تصدیق کی ہے

 

طاہر عمران نے اتوار کو ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ "برٹش ایئرویز 16 ماہ بعد لاہور کی پروازیں بند کر دے گی۔” انہوں نے مزید کہا کہ برطانوی فلیگ کیرئیر کے حکام کی جانب سے ہوائی اڈے کا حالیہ دورہ اس فیصلے کے پیچھے ایک اہم عنصر ہو سکتا ہے۔

واضح رہے کہ لاہور کا علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ اپنے مرکزی رن وے کی تعمیر کے باعث دیر سے تعطل کا شکار ہے۔ مزید یہ کہ صوبائی دارالحکومت میں موسم کی خرابی کے باعث پروازیں باقاعدگی سے تاخیر کا شکار اور منسوخ ہو رہی ہیں۔شاید یہی وجہ ہے کہ برٹش ایئرویزنے اپنی سروسز لاہور کے لیے معطل کردی ہیں

 

 

طاہر عمران کہتے ہیں کہ یہ چیز پاکستان میں تبدیلی کے خواہاں لوگوں کے لیے ایک پریشان کن چیز ہے ،ان کا کہنا تھا کہ اگریہ حال رہا تو کل کو اور بھی انٹرنیشنل فضائی کمپنی ایسا فیصلہ کرسکتی ہے

یاد رہے کہ لاہور کےلیے برٹش ایئرویز نے 14 اکتوبر 2020 کو ہفتے میں چار دن کی پرواز کا شیڈول شروع کیا،

ہیتھرو سے لاہور بدھ، جمعہ اور اتوار کو آؤٹ باؤنڈ اور پیر، جمعرات اور ہفتہ کو ان باؤنڈ چلتی ہے۔ یہ 214 سیٹ والے B787-8s کا استعمال کرتا ہے، خاص طور پر کم پریمیم روٹس کے لیے اچھا ہے

اس حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ برٹش ایئر ویز نے لاہور کےلیے پروازوں کی منسوخی کا فیصلہ اس وقت کیا جب کیریئر 27 مارچ کو اسلام آباد کو ہیتھرو سے گیٹوک کے لیے پرواز کرے گا،

کہا جاتا ہے کہ پاکستان میں برٹش ایئرویز اور ورجن کی دلچسپی مختلف وجوہات کی بنا پر ہے،جن میں سب سے پہلے تو مضبوط پوائنٹ ٹو پوائنٹ ڈیمانڈ، عام طور پر مضبوط فریٹ ڈیمانڈ ہے ،پھر ہی بین الاقوامی فضائی کمپنیاں اپنی سروسز کی فراہمی پر سوچتی ہیں

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!