ورلڈ ہیڈر ایڈ

"جے شری رام” کیوں نہیں کہا، ہندو انتہا پسندوں نے ملسمان بچے کو آگ میں پھینک دیا

بھارتی ریاست اترپردیش میں مسلم نوجوان کو "جے شری رام” نہ کہنے پر آگ میں ڈال دیا گیا.

تفصیلات کے مطابق 15 سالہ مسلم نوجوان نے دعویٰ کیا ہے کہ اسے "جے شری رام” نہ کہنے پر ہندو انتہا پسندوں نے آگ میں ڈال دیا. نوجوان کو 4 لڑکوں نے اغوا کیا اور اسے کہا کہ "جے شری رام” کے نعرے لگاؤ، لیکن ایسا نہ کرنے پراسے آگ میں ڈال دیا گیا. بچے کا 60 فیصد حصہ جھلس گیا اور اسے قریبی ہسپتال میں داخل کردیا گیا. دوسری جانب اترپردیش کی پولیس نے ان تمام الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ بچے نہ خود اپنے آپ کو آگ لگائی. پولیس نے مؤقف اختیار کیا کہ بچہ ہر کسی کو مختلف بیان دے رہا ہے جس سے لگتا ہے کہ بچہ جھوٹ بول رہا ہے.

واضح رہے کہ بھارت میں یہ پہلی بار نہیں کہ مسلمانوں پر ظلم و ستم ہو، حال ہی میں ایک مسلمان لڑکے کو بھارتی ہجوم نے صرف اس لیے ماردیا تھا کہ اس نے "جے شری رام” نہیں کہا تھا.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.