حکومت نے بجٹ میں سب سے بڑا حملہ تنخواہ دار طبقے پر کیا ہے،حافظ نعیم

آئی ایم ایف جہاں جاتا ہے وہ قوم پنپتی نہیں برباد ہوتی ہے
0
120
Hafiz Naeem Urrehman

کراچی: جماعت اسلامی کے امیر حافظ نعیم الرحمان نے کہا ہے کہ وفاقی بجٹ عوام دشمن ہے، قوم کو کوئی ریلیف نہیں دیا گیا، جاگیردار 75 سال سے ملک کا خون چوس رہے ہیں۔

باغی ٹی وی : کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے امیر جماعت اسلامی حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ کل فارم 47 والے وزیراعظم نے ایک تقریر کی، وزیراعظم نے کہا ملک کو آصف زرداری اور دیگر کی رہنمائی میں ڈیفالٹ سے بچایا، وزیراعظم نے کہا کہ یہ آئی ایم ایف کا آخری پروگرام ہوگا، ملک میں مہنگائی کا طوفان ہے-

حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ حکومت نے بجٹ میں سب سے بڑا حملہ تنخواہ دار طبقے پر کیا ہے، بجٹ میں جاگیرداروں پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا گیا، جاگیردار 75 سال سے ملک کا خون چوس رہے ہیں، بتایا جائے پرائیویٹ سیکٹر میں تنخواہوں میں کتنا اضافہ ہوا؟ میڈیا ورکرز کی تنخوا ہوں میں بھی کوئی اضافہ نہیں کیا گیا، بجٹ میں تنخواہ دار اور عام آدمی کو کوئی ریلیف نہیں دیا گیا۔

پنجاب بھر میں عیدالاضحیٰ کے موقع پر سیکیورٹی پلان ترتیب

انہوں نے مزید کہا کہ یہ بجلی کے بلوں میں ٹیکس لگا دیتے ہیں، تنخواہوں سے ٹیکس کاٹ لیتے ہیں، آپ چینی، آٹا، دال پر ٹیکس لگاتے ہیں، سیلز ٹیکس ہر چیز پر لگائے ہوئے ہیں، جن سے ٹیکس جمع کرنا ہوتا ہے ان سے کرتے نہیں ہے، جو کام حکومت کے کرنے کا ہے وہ کرتے نہیں اور زبردستی لوگوں سے ٹیکس وصول کرلیا جاتا ہے تو یہ ہمیں قابل قبول نہیں۔

حافظ نعیم الرحمان نے بتایا کہ جتنی بھی بات حکومت نے بجٹ میں کی ہے یہ خلاف واقعہ ہے، حکومت پاکستان کو ایک بار پھر معاشی دلددل میں پھینک رہی ہے، یہ دنیا میں واضح بات ہے کہ آئی ایم ایف جہاں جاتا ہے وہ قوم پنپتی نہیں برباد ہوتی ہے، اس کے تقاضے اور ہوتے ہیں ، کچھ ظاہری ہوتے ہیں اور وہ بھی تباہ کن ہوتے ہیں مگر کچھ چیزوں پر یہ چھپ کر بات کرتے ہیں اور ہماری تہذیب پر بھی ان اداروں کی جانب سے حملہ آور ہوا جاتا ہے۔

امریکی پارک میں جنونی شخص کی بچوں اور ان کی فیملیز پر فائرنگ،8 افراد …

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ پنجاب حکومت نے گندم کی قیمت مقرر کی پھر منع کردیا کہ ہم نہیں لیں گے، پھر انہوں نے کہا کہ ہم سبسڈی دیں گے لیکن اس بیان سے بھی پلٹ گئے اور اب یہ صورتحال ہے کہ جتنے بھی دعوے کیے جارہے ہیں اس میں چند ہزار سے زائد کسانوں کے علاوہ کسی کو شامل نہیں کیا جارہا جس کے نتیجے میں آپ دھوکہ دہی کریں اور اگلے سال گندم کی فصل میں کمی واقع ہوسکتی ہے، کیونکہ کسان کہیں گے کہ جو ہم سے وعدے کیے گئے بمپر فصل کے حوالے سے پورے نہیں ہوئے اس لیے ہم گندم زیادہ پیدا نہیں کریں گے اور اس سے ملک میں بحران ہوگا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہا کہ اس بحران سے بھی شہباز شریف جیسا مافیا فائدہ اٹھائے گا پھر امپورٹ کریں گے گندم کو، اور جو امپورٹ ہوئی تھی پہلے گندم اس کی رپورٹ کہاں ہے؟ جب ہم ایک ایک ارب کی بھیک مانگ رہے ہوتے ہیں تو تب یہ مافیا گندم کے ہوتے ہوئے اربوں کی گندم درآمد کر رہی ہوتی ہے۔

وزیر اعلیٰ پنجاب کا والد سے محبت کے عالمی دن پر پیغام

Leave a reply