fbpx

بشری انصاری کا کشمیری بہن بھائیوں کے لئے پیغام

5 اگست 2019 کو ایک صدارتی حکم نامے میں، مودی حکومت نے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اور 35-A کی دفعات کو منسوخ کرنے کا اقدام کیا اس اقدام کے بعد کشمیری اور پاکستانی سراپا احتجاج ہیں.گزشتہ چار برس سے مقبوضہ وادی کے عوام آزادی اظہار، پر امن اجتماع سمیت تمام بنیادی حقوق سے محروم ہیں. آج چونکہ پانچ اگست ہے لہذا آج کا دن یوم استحسال کے طور پر منایا جا رہا ہے.اس موقع پر اداکارہ بشری انصاری نے کشمیر کے نام ایک پیغام جاری کیا انہوں نے کہا کہ
کشمیر نام ہے اس چہچہاتے پرندے کا جس سے اس کی پرواز چھین لی گئی ہے ۔ ہم بطور پاکستانی اپنے تمام کشمیری بہن
بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں جو اپنی آزادی کے حق کے لئے لڑ رہے ہیں کشمیر کی منزل آزادی ہے۔

پاکستانیوں کے دل کشمیر کے ساتھ دھڑکتے ہیں اس لئےیوم استحصال کشمیر پر پاکستان نے کشمیریوں کی منصفانہ جدوجہد کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھنے کےعزم کا اعادہ کرتے ہیں، اور مسلسل چار سال سے مقبوضہ کشمیر کی جغرافیائی حیثیت اور آبادی کا تناسب تبدیل کرنے کے بھارتی اقدامات ناقابل قبول قرار دے رہے ہیں۔یاد رہے کہ کشمیریوں پر ظلم و ستم گزشتہ ایک صدی سے جاری ہے ، لیکن آرٹیکل 370 اور 35 اے کے منسوخ ہونے کے بعد سے صورتحال خراب ہو گئی ہے۔