fbpx

بزدار سرکار تحریر: بختاور گیلانی

پی ٹی آئی نے جب الیکشن میں واضح اکثریت حاصل کی
تو ہر شخص اس سوچ و بچار میں تھا تخت لاہور کا وارث کون بنے گا؟
آیا کہ پہلی حکومتوں کی طرح اشرافیہ نام نہاد وزیراعلی کی طرح اپنا ہی کوئی رشتہ دار یا دوست اسکا مستحق ٹھرے گا
یا کوئی عام ورکر?
پی ٹی آئی میں بڑے بڑے نام تھے
جو وزیراعلی بننے کی دوڑ میں شامل تھے
برسوں سے پنجاب میں حکومت کے سنہری خواب دیکھ رکھے تھے
آخر کار کپتان نے سب کے سپنوں کو چکنا چور کرتے ہوئے قرعہ ایک نہایت پسماندہ علاقہ کے سادہ ترین شخص کا نکلا
جسے لوگ سردار عثمان بزدار کے نام سے جانتے ہیں
جیسے ہی یہ فیصلہ ہوا
بڑے بڑے برج اوندھے منہ گر گئے
آخر خان نے کیا فیصلہ کیا ہے؟
بس حلف اٹھانے سے پہلے ہی اندرونی بیرونی حاسدین نے بزدار سرکار کو آڑے ہاتھوں لے رکھا تھا
کوئی موقعہ تنقید کا ہاتھ سے نہیں جانے دیتے تھے
آخر بزدار نے آہستہ آہستہ بیٹننگ شروع کی پھر آہستہ آہستہ کوئی اچھا سٹروک کھیلتا
بزدار سرکار نے آہستہ آہستہ پچ کی کیفیت کو سمجھنا شروع کیا
پھر بلا زور سے چلنا شروع ہوا
چھکے چوکے لگانا شروع کئیے
آہستہ آہستہ ناقدین کے منہ بند ہونا شروع ہو گئے
آب بزدار اس پوزیشن پہ کھڑا ہے
ہر گیند کو کریز سے باہر نکل کے کھیلتا ہے
اور گیند بائونڈری سے باہر جا کر گرتی ہے
بزدار سرکار نے وہ تاریخی کام پنجاب میں شروع کئیے
جو پنجاب کی تہتر سالہ تاریخ میں کوئی نہ کر سکا
آئیے چند آہم کاموں پہ روشنی ڈالتے ہیں۔۔۔
‏ پنجاب کے تمام 36 اضلاع میں NADRA کے ذریعے "ڈیجیٹل وراثتی سرٹیفیکیٹس” کا اجراء شروع کر دیا گیا ہے

اب وراثت کےقانونی حقدار عدالتوں سے رجوع کیے بغیر نادرا سے 15 دن میں بآسانی سرٹیفیکیٹ حاصل کر سکیں گے اور عدالتی نظام پر یہ غیر ضروری بوجھ کم ہو گا!
ایک اور زبردست منصوبہ بزدار سرکار کا۔۔۔۔
‏2019 کے آخر میں 32 ارب روپے کی لاگت سے شروع ہونے والے منصوبے جلالپور کینال سسٹم کی تعمیر کے پہلے پیکج پر تیزی سے کام جاری ہے۔