ورلڈ ہیڈر ایڈ

چیئرمین نیب کی کردار کشی کرنیوالی طیبہ گل عدالت پیش، عدالت نے بڑا حکم دے دیا

چیئرمین نیب کے خلاف مبینہ طور پر الزام لگانے والی طیبہ گل اور فاروق نول کے خلاف نیب کی جانب سے دائر ریفرنس پر سماعت ہوئی

خاوند کی رہائی کیلئے چیئرمین نیب نے…..ویڈیو بنانے والی خاتون نے کیا کہا؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سماعت احتساب عدالت کے جج جواد الحسن نے کی . نامزد ملزم طیبہ گل اور فاروق نول نیب عدالت میں پیش ہوئے. عدالت نے آئندہ سماعت پرملزموں کوریفرنس کی کاپیاں فراہم کرنے کی ہدایت کی تو طیبہ گل نے کہا کہ ہمیں ریفرنس کی کاپیاں آج ہی فراہم کی جائیں ،جس پر عدالت نے ریمارکس دیا کہ پہلے یہ دیکھ لیں ریفرنس کی کاپیاں مکمل ہیں یا نہیں پھر آپکو دیں گے، طیبہ گل نے عدالت میں استدعا کی کہ ہائیکورٹ میں ضمانت دائرکرنا ہے لہذا آج ہی کاپیاں فراہم کی جائیں،جس پر عدالت نے طیبہ گل کے اصرار پر آج ہی ریفرنس کی کاپیاں فراہم کرنے کی ہدایت کردی .

چیئرمین نیب کی ویڈیو لیک کرنیوالوں کے خلاف ریفرنس دائر

چیئرمین نیب کے خلاف خبر پر پیمرا ان ایکشن، نیوز ون کو نوٹس جاری، جواب مانگ لیا

واضح رہے کہ نیب نے چیئرمین نیب، دیگر اداروں کے نام پر فراڈ کرنے والےگروہ کیخلاف ریفرنس دائرکر رکھا ہے

چیرمین نیب کی جانب سے احتساب عدالت میں دائر ریفرنس میں فاروق نول اور طیبہ گل کو مرکزی ملزم نامزد کیا گیا ہے، احتساب عدالت نے ملزمان کو نوٹس جاری کرتے ہوئے 17 جون کو طلب کیا تھا.ریفرنس کے متن میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ گروہ نے چیرمین نیب سمیت متعدد افراد کو بلیک میل کیا ملزمان نے سادہ لوح شہریوں سے 2 کروڑ 44 لاکھ 50 ہزار روپے کا فراڈ کیا ،ملزمان کیخلاف 36 گواہان نے نیب کو بیانات قلمبند کرائے ،.

چیئرمین نیب کی کردار کشی کرنیوالے سائبر کرائم کے ماہر، انڈیا اور افغانستان میں رابطے، حیران کن انکشافات

واضح رہے کہ نیوز ون چینل نے ایسی ویڈیو اور آڈیو نشر کی جس میں مبینہ طور پر چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کو ایک خاتون سے نازیبا گفتگو کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔ قومی احتساب بیورو کے ترجمان نے چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کے خلاف چلنے والی خبر کی تردید کردی۔ترجمان نیب کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ نیوز ون پر چیئرمین نیب کے حوالے سے حقائق کے منافی، من گھڑت ، بے بنیاد اور جھوٹی خبر چلائی گئی جس کا مقصد جسٹس (ر) جاوید اقبال کی ساکھ کو مجروح کرنا ہے .

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.