چیف سیکرٹری کو بتا دیں، اس افسر کا تبادلہ نہیں ہو گا، عدالت

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں  سموگ، ماحولیاتی آلودگی روکنے اور پانی کی بچت سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی.

واٹر کمیشن کی رپورٹ پیش کر دی گئی، عدالت نے قرار دیا کہ اس سال سموگ کے حالات بہتر ہیں۔ جسٹس شاہد کریم نے کیس پر سماعت کی۔ عدالت میں ڈی جی ایل ڈی اے احمد عزیز تارڑ اور ایم ڈی واسا زاہد عزیز پیش ہوئے۔ 

واٹر کمیشن کی رپورٹ عدالت میں پیش کر دی  گٸی۔ جس میں بتایا گیا کہ زیر زمین پانی نکالنے پر ہاوسنگ سوسائیٹیز سے 93 کروڑ روپے ایک سال میں اکٹھے ہوئے ہیں۔ عدالت نے کہا کہ اس سال سموگ کے حالات بہتر ہیں، اب تو بھٹے بھی بند ہیں، محکمے اپنا کام بلا تفریق جاری رکھیں، کہیں سے پریشر آئے، اگر سیاسی دباو بھی ہو تو عدالت کو بتائیں۔

ایم ڈی واسا نے رپورٹ عدالت میں جمع کرادی ، ایم ڈی واسا نے عدالت میں کہا کہ زیرزمین پانی مفت استعمال کرنیوالوں سے 93 کروڑوصول کیے۔

عدالت نے کہا کہ ڈی جی ایل ڈی اے غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز سے پانی کے بل وصول کریں ،جسٹس شاہد کریم نے ڈی جی ایل ڈی اے کو حکم دیتے ہوئے کہا کہ بلا تفریق کارروائی جاری رکھیں،کوئی سیاسی دباو آئے توعدالت کو آگاہ کریں ،

عدالت نے ڈی جی ایل ڈی اے کا تبادلہ کرنے سے روک دیا ،عدالت نے کہا کہ چیف سیکرٹری کوبتا دیں ڈی جی ایل ڈی اے کا تبادلہ نہیں ہوگا ،عدالت نے سموگ سے متعلق کیس کی سماعت ایک ہفتے کے لیے ملتوی کر دی۔

سموگ کے تدارک کے لئے لاہور ہائیکورٹ نے حکومت سے کیا پوچھ لیا؟

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.