fbpx

انسانی حقوق کے نام پرعالمی ادارےتعمیری کام کریں:شرارتوں اورسازشوں سے بازرہنا چاہیے:چین

بیجنگ:انسانی حقوق کے نام پرعالمی ادارےتعمیری کام کریں:شرارتوں اورسازشوں سے بازرہنا چاہیے:اطلاعات کے مطابق چین نے کہا کہ کثیرالجہتی انسانی حقوق کے اداروں کو تمام فریقوں کے درمیان تعمیری تبادلے اور تعاون کے پلیٹ فارم کے طور پر کام کرنا چاہیے، چین مغربی ممالک پر الزام لگاتے ہوئے کہ وہ اپنی خلاف ورزیوں کو نظر انداز کرتے ہوئے دوسروں پر فیصلہ سناتے ہیں۔ایسا نہیں ہونا چاہیے

اس سلسلے میں چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے جنیوا میں مقیم ترقی پذیر ایشیائی اور افریقی ممالک کے سفیروں کے ایک وفد کو بتایا کہ ان کا یہ دعویٰ کہ "انسانی حقوق خودمختاری سے بلند ہیں” درحقیقت جو کچھ آجکل عالمی ادارے کررہے ہیں‌وہ دوسرے ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت کی کوشش ہے۔

 

ترقی پذیر ممالک کے ساتھ کام کرنے کے لیے تیار ہیں،چین

وانگ نے سفیروں کو بتایا کہ "نام نہاد ‘ویلیو ڈپلومیسی’ کا نفاذ دراصل ممالک کو انسانی حقوق کی آڑ میں فریقین کا انتخاب کرنے پر مجبور کر رہا ہے، جسے نام نہاد ‘جمہوری اصلاحات’ کہا جاتا ہے لیکن اس کا نتیجہ بدامنی، تنازعات اور انسانی تباہی ہے”دوسری طرف چین کی وزارت خارجہ نے وانگ کے دورے پر آئے ہوئے سفیروں کو بتاتے ہوئے کہا کہ "تاریخ کے سبق کو احتیاط سے سیکھنا چاہیے، اور ان کارروائیوں کی مل کر مزاحمت کی جانی چاہیے۔”

 

چین تائیوان معاملہ ہوا مزید خراب، چین نے سات تائیوانیوں پر پابندیاں عائد کردیں

کسی کا نام لیے بغیر، وانگ نے "کچھ مغربی ممالک” پر الزام لگایا کہ وہ انسانی حقوق پر دوسروں کو "جائز” کر رہے ہیں۔”وہ صرف دوسروں کو دکھانے کے لیے ٹارچ کا استعمال کرتے ہیں لیکن خود کو نہیں۔ وہ ترقی پذیر ممالک کے انسانی حقوق کی صورتحال پر انگلیاں اٹھاتے ہیں اور اپنے ہی ممالک اور اپنے اتحادیوں کی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر آنکھیں بند کرتے ہیں۔ منتخب اندھے پن کی مشق میں مشغول ہوں، یا۔

چینی اعلیٰ سفارت کار نے "باہمی احترام” اور "دوسروں پر مسلط ہونے” کی مخالفت پر بھی زور دیا۔”مختلف ممالک کے مختلف قومی حالات اور مختلف تاریخیں اور ثقافتیں ہیں۔ ہمیں ملک کی اصل صورت حال سے آگے بڑھنا چاہیے اور انسانی حقوق کی ترقی کا ایسا راستہ تلاش کرنا چاہیے جو لوگوں کی ضروریات کو پورا کرے۔

جزیرہ نما کوریا کوکشیدگی سے بچایا جائے:چین کا پیغام

انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کا مفہوم جامع ہے۔ شہری اور سیاسی حقوق کے ساتھ ساتھ اقتصادی، سماجی اور ثقافتی حقوق کا تحفظ ضروری ہے، جس میں انفرادی حقوق اور اجتماعی حقوق دونوں شامل ہیں،” انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ "ترقی پذیر ممالک، خاص طور پر کم ترقی یافتہ ممالک کے لیے، روزگار اور ترقی کا حق لوگوں کی سب سے اہم ضرورت ہے۔”

انہوں نے مزید کہا کہ "انسانی حقوق کے کثیرالجہتی اداروں کو تمام ممالک، خاص طور پر ترقی پذیر ممالک کے معقول مطالبات پر توجہ دینی چاہیے، اور اقتصادی، سماجی اور ثقافتی حقوق اور ترقی کے حق میں اپنی توجہ اور سرمایہ کاری میں مزید اضافہ کرنا چاہیے۔”