fbpx

چین کے جنگی طیاروں کی آبنائے تائیوان کی حدود میں پرواز

تائیوان کی مسلح افواج نے فضائی اور بحری گشت میں اضافہ کردیا

تائیوان کا کہنا ہے کہ چین کے 17 جنگی طیاروں نے ایک بار پھر آبنائے تائیوان کو عبور کرتے ہوئے پروازیں کیں۔

باغی ٹی وی : چین اور تائیوان کے درمیان مہینوں سے جاری کشیدگی میں اضافہ ہو رہا ہے تائیوان کی وزارت دفاع کے مطابق ہفتہ کی شام چین کے 43 جنگی طیارے اور 9 بحری جنگی جہاز ہفتہ کی شام تائیوان کی سمندری حدود میں دیکھے گئے ہیں جس کےبعد تائیوان کی مسلح افواج نے فضائی اور بحری گشت میں اضافہ کردیا۔

امریکہ فی الفورتائیوان کی فوجی مدد کرنےسے بازآجائے:چین کی امریکہ کوسخت وارننگ

تائیوان کی وزارت دفاع کے مطابق چین کے چار سخوئی ایس یو تھرٹی اور چینگڈو جے ٹین طرز کے چار لڑاکا طیارے اور نو شینیانگ جے سولہ طرز کے طیاروں نے آبنائے تائیوان کو عبور کیا اینٹی سب میرین ائیر ڈیفنس آئی ڈنٹفکیشن زون میں ایک اینٹی سب مرین طرز کے تیارے نے بھی اڑان بھری اس کے ساتھ ہاربن طرز کا طیارہ بھی محو پرواز تھا۔

تائیوان نے بتایا کہ اس نے چین کا مقابلہ کرنے کیلئے میزائل ڈیفنس سسٹم تعینات کر دیا ہے۔

دریں اثنا، چین اور امریکہ کے درمیان گزشتہ ماہ کے اوائل میں ہاؤس سپیکر نینسی پیلوسی کے تائی پے کے متنازعہ دورے کے بعد سے کشیدگی برقرار ہے امریکی بحریہ کے دو جنگی بحری جہاز آبنائے تائیوان میں داخل ہوئے جو کہ ایوان کی اسپیکر نینسی پیلوسی کے خود ساختہ جزیرے کے دورے کے بعد سے امریکہ کی پہلی بحری راہداری ہے۔

امریکا نے پاکستان کو ایف 16 طیاروں کے سامان اورآلات فروخت کرنےکی منظوری دیدی

یاد رہے گزشتہ کچھ عرصہ سے چین نے تائیوان کے اوپر اپنی پروازوں کو تیز کر دیا ہے ان کارروائیوں کا مقصد نیم خود مختار جزیرے تائیوان کو سخت پیغامات پہنچانا ہے تائیوان سمجھتا ہے کہ اس کی23 ملین آبادی کو بیجنگ سے خود ارادیت اور مستقل آزادی کا حق حاصل ہے۔ بیجنگ تائیوان کا یہ دعویٰ تسلیم نہیں کرتا اور اس جزیرے کو اپنا حصہ قرار دیتا ہے۔

امریکہ کی جانب سے تائیوان کی مدد کے مسلسل تکرار کی جا رہی ہے۔ امریکہ تائیوان کو اسلحہ کے معاہدوں کے ذریعہ بھی تعاون فراہم کر رہا گزشتہ ہفتے ہی امریکہ اور تائیوان کے درمیان 1.1 بلین ڈالر کا معاہدہ ہوا جس میں 60 اینٹی شپ میزائل اور 100 فضا سے فضا میں مار کرنے والے میزائل شامل ہیں ان ہی وجوہات کی بنا پر چین اور تائیوان کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہو گیا ہے۔

چین نے امریکہ کی جانب سے تائیوان کو ہتھیاروں کی ممکنہ فروخت پر سخت اعتراض کرتے ہوئے امریکہ پر زور دیا ہے کہ وہ جزیرے کے ساتھ اپنا فوجی رابطہ فوری طور پر بند کر دے ہ خود مختار جزیرے کے ساتھ کوئی بھی فوجی رابطہ "ایک چین” کے اصول کی خلاف ورزی ہے تاہم امریکہ فوری طور پر اسلحے کی فروخت کو منسوخ کرے اور تائیوان کے ساتھ اپنے فوجی تعلقات ختم کرے۔

امریکی بمبار طیارے کو دوران پرواز 6 سعودی لڑاکا طیاروں نے سیکیورٹی فراہم کی