fbpx

چونیاں : سرکاری ہسپتال میڈیسن کمپنیوں نے خرید لیا،ڈاکٹر غیرملکی دوروں پر اور تحفوں کی برسات

باغی ٹی وی ،چونیاں(نامہ نگار) سرکاری ہسپتال میڈیسن کمپنیوں نے خرید لیا،ڈاکٹر غیرملکی دوروں پر اور تحفوں کی برسات
تفصیل کے مطابق تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال چونیاں میں میڈیکل ریپ نے ایم ایس سمیت دیگر ڈاکٹروں کو یرغمال بنا لیا ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹروں کو لاہور کے معروف ہوٹلوں میں لنچ، الیکٹرونک وفرنیچر کا سامان، ملکی و غیر ملکی دورے دے کر کمیشن پر ڈاکٹروں سے ہسپتال میں موجود ادویات کی بجائے باہر کی پرائیویٹ من پسند ادویات لکھوائی جا رہی ہیں، شہریوں کی جیبوں پر سرعام ڈاکہ ڈالا جا رہا ہے، شہریوں کا وزیر اعلیٰ پنجاب ،وزیر صحت،کمیشنر لاہور ،ڈی سی قصور سمیت سی ای او ہیلتھ قصور سےفوری نوٹس لینے کا مطالبہ، محکمہ صحت پنجاب، صحت کے نام پر اربوں روپے کا بجٹ خرچ کر رہا ہے لیکن اس کے ثمرات عوام تک نہیں پہنچ رہے جو کہ بڑا المیہ ہے۔سینئر صحافیوں و دیگر شہریوں کا ہسپتال میں جانے کا اتفاق ہوا تو ڈیوٹی پر موجود ڈاکٹرز معروف کمپنیوں کے میڈیکل ریپ سے دوران ڈیوٹی خوش گپیوں میں مصروف تھےاور مریض اور لواحقین بے یارو مددگار انتظار کر رہے تھے سلیم اکبر، اسماعیل، شکیل احمد و دیگر مریضوں نے بتایا کہ ہسپتال میں سہولیات کا فقدان ہے ڈاکٹرز ڈیوٹی پر لیٹ جبکہ ٹائم سے پہلے گھروں کو لوٹ جاتے ہیں اور باوثوق ذرائع کے مطابق ہسپتال میں موجود نرسنگ عملہ کی موجودگی میں سویپر مریضوں کو انجیکشن لگاتے ہیں رات کو ڈیوٹی ڈاکٹر ڈیوٹی دینے کی بجائے اپنے کمرے یا رہائش پر سو جاتے ہیں اسماعیل شہری نے بتایا کہ چند روز قبل میری ہمشیرہ کی طبیعت خراب ہو گئی تحصیل ہسپتال چونیاں میں رات دو بجے لایا گیا تو کوئی ڈاکٹر موجود نہ تھا مجبوراً پرائیویٹ چیک اپ کروانا پڑا۔ میڈیکل ریپ والوں کی وجہ سے غریب مریضوں کو مجبوراً مہنگی ادویات پرائیویٹ سٹوروں سے خریدنا پڑتی ہیں مقامی شہریوں نےوزیر اعلیٰ پنجاب ،وزیر صحت،کمیشنر لاہور ،ڈی سی قصور سمیت سی ای او ہیلتھ قصور سےفوری نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہےکہ کروڑوں اور اربوں روپے خرچ کرنے کے باوجود اگر عوام کو ادویات باہر سے لینی ہیں اور دیگرصحت کی سہولیات نہیں دینی تو پھر تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال کو بند کر دیا جائے۔