fbpx

سینما بس آباد ہونے چاہیں چاہے ہالی بالی یا لالی وڈ کی فلمیں لگیں سید نور

سید نور کہتے ہیں کہ فلم پرڈیوسر ایسوسی ایشن ہمیشہ سے ہی بہت زیادہ متحرک رہی ہے اس ایسوسی ایشن کو بڑے بڑے لوگوں نے سنبھالا اور بہت کام کیا. ابھی جو باڈی منتخب ہوئی ہے اس کے دعوے بھی اچھے ہیں امید ہے کہ یہ باڈی بھی اچھا کام کریگی اور فلم انڈسٹری کے مسائل کا حل تلاش کریگی. سید نور نے مزید کہا کہ فلم پرڈیوسر ایسوسی ایشن فلم انڈسٹری کے مسائل لیکر ایوانوں تک گئی وعدے وعید بھی ہوئے ڈسکشنز بھی ہوئیں. اب جبکہ ن لیگ کی حکومت آئی ہے اس نے فلم کو انڈسٹری کا درجہ بھی دیدیا ہے امید ہے کہ جو اعلانات کئے گئے ہیں ان

ہر عمل در آمد کیا جائیگا. سید نور نے کہا کہ سینما گھر آباد رہنے چاہیں چاہے ہالی وڈ کی فلمیں لگیں بالی وڈ یا لالی وڈ کی . جہاں تک بلال لاشاری کی فلم دا لیجنڈ آف مولا جٹ کی بات ہے تو انہوں نے جدید تقاضوں کے مطابق فلم بنائی ہے اور ہمیں بہت امید ہے کہ فلم اچھا بزنس کریگی . بڑے بجٹ کی بڑی فلم ہے جس میں‌بڑے سٹارز ہیں لوگ فلم کے منتظر ہیں.پرانی مولا جٹ پرانے دور کی تھی لیکن نئی مولا جٹ نئے دور کے مطابق ہے. بلال لاشاری نے ایسی فلم تخلیق کی ہے کہ جو پاکستان کی بین الاقوامی سطح پر بھی نمائندگی کرسکتی ہے.