fbpx

وزیراعلیٰ پنجاب کا لاہور میں جرائم کنٹرول کرنے کا حکم،دو ہفتے میں رپورٹ طلب

وزیراعلیٰ پنجاب کا لاہور میں جرائم کنٹرول کرنے کا حکم،دو ہفتے میں رپورٹ طلب
وزیراعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کی زیر صدارت وزیراعلیٰ آفس میں اعلیٰ سطح کا اجلاس منعقد ہوا،سابق وفاقی وزیرمونس الٰہی او رمشیر داخلہ عمر سرفراز چیمہ بھی موجود تھے۔

اجلاس میں لاہور میں امن وامان کی صورتحال کاجائزہ لیاگیا۔سی سی پی او لاہور نے بریفنگ دی۔وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی نے لاہور میں جرائم کو ہر صورت کنٹرول کرنے کاحکم دیااور دو ہفتے میں رپورٹ طلب کر لی۔وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی نے کہاکہ لاہور میں کرائم کو ہر صورت کنٹرول کیاجائے گا۔کرائم کے خاتمے کے لئے ”ہارڈ پولیسنگ“ کی جائے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ اچھے پولیس افسروں کو عوام ہمیشہ یادر کھتے ہیں۔اجلاس میں فرانزک لیب کی توسیع اوردائرہ کار بڑھانے کا فیصلہ کیاگیا۔وزیراعلیٰ پرویزالٰہی نے ہدایت کی کہ ملتان اورراولپنڈی میں بھی فرانزک لیب بنے گی۔فرانزک لیب کی توسیع او ربہتری کے لئے ڈیفڈ حکام نے تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔اجلاس میں ڈولفن پولیس کے افعال کار ازسرنو طے کرنے کا فیصلہ کیاگیا۔

‏ سوشل میڈیا پر وزیر اعظم کے خلاف غصے کا اظہار کرنے پر بزرگ شہری گرفتار

کرونا میں مرد کو ہمبستری سے روکنا گناہ یا ثواب

فیس بک، ٹویٹر پاکستان کو جواب کیوں نہیں دیتے؟ ڈائریکٹر سائبر کرائم نے بریفنگ میں کیا انکشاف

ٹویٹر پر جعلی اکاؤنٹ، قائمہ کمیٹی اجلاس میں اراکین برہم،بھارت نے کتنے سائبر حملے کئے؟

بیس ہزار کے عوض خاتون نے ایک ماہ کی بیٹی کو فروخت کیا تو اس کے ساتھ کیا ہوا؟

بھارت ، سال کے ابتدائی چار ماہ میں کی 808 کسانوں نے خودکشی

سال 2020 کا پہلا چائلڈ پورنوگرافی کیس رجسٹرڈ،ملزم لڑکی کی آواز میں لڑکیوں سے کرتا تھا بات

سائبر کرائم ونگ کی کاروائی، چائلڈ پورنوگرافی میں ملوث تین ملزمان گرفتار

سپریم کورٹ کا سوشل میڈیا اور یوٹیوب پر قابل اعتراض مواد کا نوٹس،ہمارے خاندانوں کو نہیں بخشا جاتا،جسٹس قاضی امین

وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی نے دو ہفتے میں ڈولفن پولیس کے بارے میں رپورٹ طلب کر لی اور کہاکہ ڈولفن پولیس کو ری ویمپ کر کے فعال اور مستعددفورس بنایا جائے گا۔ اجلاس میں لاہور میں 8نئے تھانے بنا نے کا فیصلہ بھی کیاگیا،وزیراعلیٰ چودھری پرویزالٰہی نے منظوری دے دی۔ وزیراعلیٰ چودھری پرویز الٰہی نے ہدایت کی کہ لاہورسمیت پنجاب کے تھانو ں میں پولیس نفری بتدریج پوری کی جائے گی۔وزیراعلیٰ نے واضح کیاکہ جرائم کے خاتمے کے لئے پولیس کی معاونت اور پشت پناہی کریں گے۔ عوام کو پر امن ماحول فراہم کرنے کے لئے پولیس فورس کی ضروریات پوری اور مسائل حل کریں گے۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ پٹرولنگ پولیس کی وجہ سے ماضی میں جرائم میں نمایاں کمی آئی۔پٹرولنگ پولیس کو شہباز دور میں غیر فعال کرنے سے کرائم بڑھا اوربدامنی پھیلی۔ٹریفک وارڈن اور پٹرولنگ پولیس نے مثالی کارکردگی کا مظاہرہ کیا،دونوں کو سیاسی تعصب کی بھینٹ چڑھا دیا گیا۔ پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ محمد خان بھٹی، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ کیپٹن (ر) اسداللہ خان، قائمقام انسپکٹر جنرل پولیس کنور شاہ رخ،سی سی پی او او رلاہو رکے تمام پولیس افسروں بھی اجلاس میں شریک تھے۔