fbpx

کالونی کا پینے کا پانی ڈیڑھ ماہ سے معطل

قصور
ڈسٹرکٹ ہسپتال قصور کی کالونی کے مکین پینے کے پانی سے محروم۔ملازمین کی رہائشی کالونی میں نصب ٹینکی کی موٹر چلانے کیلئے کوئی مستقل ملازم نہیں ،مکینوں کا ڈپٹی کمشنر قصور سے فوری نوٹس لے کر پینے کے صاف پانی کی بلا تعطل فراہمی کا مطالبہ کیا ہے

تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ ہسپتال قصور کے ملازمین کیلئے بنائی جانیوالی رہائشی کالونی میں جس میں ڈاکٹرز، کنسلنٹ، پیرا میڈیکل سٹاف سمیت دیگر ملازمین رہائش پذیر ہیں، کالونی کے مکینوں کو پینے کا صاف پانی تقریباً ڈیڑ ھ ماہ سے میسر نہیں اگر کبھی کبھار پانی آبھی جائے تو یہ اس مضرصحت پانی میں ریت اور کیڑے تیرتے صاف دیکھے جا سکتے ہیں۔اس پانی کی وجہ سے ملازمین اور ان کے بچوں میں موذی امراض میں مبتلا ہورہے ہیں۔ ٹینکی میں نصب موٹر چلانے کیلئے کوئی مستقل ملازم بھی نہیں ہے، اگر مکین اس موٹر کو خود چلانا چاہیں تو اس کے راستے میں بڑی بڑی خطرناک جھاڑیاں موجود ہیں* جن میں سے گزرتے ہوئے ملازمین سخت خوف کا شکار رہتے ہیں۔ ملازمین پانی کی عدم دستیابی کی وجہ سے بروقت اپنی ڈیوٹی پر نہیں پہنچ پاتے۔ اس بابت ایم ایس ہسپتال کوبار ہامرتبہ شکایت اور درخواستیں دے چکے ہیں مگر ایم ایس نے عدم دلچسپی کا مظاہرہ کیا اور تاحال اس سلسلے میں کوئی کارروائی نہ کی ہے
کالونی کے مکینوں نے ڈپٹی کمشنر قصور سے فوری نوٹس لینے اور مکینوں کو پینے کے صاف پانی کی بلا تعطل فراہمی کا مطالبہ کیا ہے۔