چترال:حالیہ برفباری کے باعث وادی کالاش کے تینوں ودیوں میں ٹریفک اور مواصلاتی نظام درہم برہم

چترال ( فتح اللہ) چترال میں چار روز تک شدید برفباری ہوتی رہی جس کے باعث چترال میں مواصلات اور ٹریفک کا نظام درہم برہم ، لوگ گھروں میں محصور ہو کر رہے گئے ہیں ۔

لوئر چترال وادی کالاش کے تینوں ودیوں میں تین فٹ تک برف پڑی ہے جس کی وجہ سے عوام شدید پریشانی سے دو چار ہیں ۔ خوارک کی کمی ، ہپستال تک رسائی ، بجلی کی فراہمی معطل ، سڑکوں کی بندش ، موبائل سروس کی بندش اور درجنوں مسائل کا شکار وادی کے عوام برفباری تھمنے کے بعد بھی بحالی کے کام شروع نہ کرنے پر پریشانی سے دو چار ہوگئے ہیں ۔ لوگ کئی گھنٹوں پیدل سفر کر کے آیون پہنچ رہے ہیں ۔

پیدل سفر کرنے والے چترال پہنچ کر اپنی تنخواہیں وصول کر رہے ہیں اور یہاں سے خوراک کا بندوست کرتے ہوئے آیون سے وادی تک اشیاء خوردونوش اپنے کندھوں پر اٹھا کر گھروں میں پہنچ جاتے ہیں ۔

وادی کالاش کے درجنوں افراد ڈسٹرکٹ ہسپتال میں داخل ہیں جو کہ ڈسچارج کرنے کے باجود گھروں کے لیے نہیں جا سکتے ہیں جس کے باعث غریب عوام ادھار لے کر اخراجات پورا کرنے پر مجبور ہیں ۔

چترال سمیت پاکستان کے دیگر شہروں میں مقیم وادی کےافراد اپنے گھر والوں سے رابطے نہیں کر پاتے ہیں اور وادی کیلاش میں موجود لوگ اپنے پیاروں سے رابطے نہیں کر پا رہے ہیں جس کی وجہ شدید ذہنی تناؤ میں مبتلا ہو گئے ہیں ۔

چترال لوئر اور وادی میں محصور عوام نے ڈسٹرکٹ انتظامیہ سے پرزور مطالبہ کیا ہے کہ ڈسٹرکٹ انتظامیہ بروقت روڈ پر سے برف ہٹانے کا کام شروع کرکے عوام کی مشکلات میں کمی لائے تاکہ عوام خوارک کی کمی کو پورا کر پائے اور مریضوں کو ہسپتالوں تک پہنچانے میں ان کے لیے آسانی ہو

جو مریض ہسپتال سے ڈسچارج ہوکر ہوٹلوں میں مقیم ہیں وہ بھی آسانی سے گھروں تک پہنچ جائیں اور اضافی اخراجات کی پریشانی سے نجات حاصل ہو ۔

Leave a reply