ورلڈ ہیڈر ایڈ

تحریک نفاذ شریعت محمدی کے بانی صوفی محمد 86 سال کی عمر میں وفات پاگئے

پشاور:تحریک نفاذ شریعت محمدی کے بانی مولانا صوفی محمد 86 سال کی عمر میں قضائے الٰہی سے وفات پا گئے ہیں. صوفی محمد کی وفات کی تصدیق ان کےبیٹے نے کردی ہے

مولانا صوفی محمد ملک میں زبردستی شریعت نافذ کرنے کےحوالے سے بڑے مشہور اور متازعہ گردانے جاتے تھے.صوفی محمد نے 1990 سے لیکر 2002 تک مالاکنڈ ڈویژن میں شریعت کا نفاذ کر رکھا تھا جسے وہ پورے ملک تک پھیلانے کے لیے حکومتوں پر دباو ڈالتے رہے

مولانا صوفی محمد تحریک طالبان کےسربراہ ملا فضل اللہ کے سسر تھے جو کہ اپنے سسرکی طرز پر خیبر پی کے میں سخت شرعی قوانین نافذ کرنے کا حامی تھا اور دو دہائیوں تک زبردستی کی بنیاد پر شریعت نافذ کرنے کی کوششیں کرتے رہے .ملا فضل اللہ بعد میں تحریک طالبان میں شامل ہوگئے اور پاکستان میں شریعت کے نفاذ کی آڑ میں پاکستان بھر میں دھماکے اور خونین کارروائیوں میں ملوث تھا جس میں ہزاروں پاکستانی شہید ہوگئے تھے

یاد رہےکہ بعد ازاں مولانا صوفی محمد نے اپنے داماد ملا فضل اللہ سے لاتعلقی کا اعلان کرتے ہوئے ریاست کے قوانین پر من وعن عمل کرنے کا اعلان کیا اور کسی بھی جبری سوچ سے دور رہنے کا وعدہ کیا تھا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.