fbpx

1کروڑ50 لاکھ کی ڈکیتی کرنے والے مجرم پکڑے گئے

جمشیدپور:پولیس نے بینک ڈکیتی میں ملوث ایک بین ریاستی گینگ کو گرفتارکرلیا ہے۔ اس گینگ نے جمشید پور میں ایک قومی بینک سے تقریباً 1.5 کروڑ روپے نقد اور سونے کے زیورات لوٹ لیے،

اس سلسلے میں پولیس نے کہا کہ 18 اگست کو جمشید پور بینک لوٹ میں ملوث گینگ کے سات ارکان میں سے دو چوری کی رقم لے کر ملک سے فرار ہو گئے ہیں۔ ایس ایس پی، پربھات کمار نے کہا کہ اس گروہ نے فروری میں جمشید پور میں ایک نامور جیولر سے 32 لاکھ روپے بھی لوٹے تھے۔

ایس ایس پی نے مزید بتایا کہ گرفتار گینگ کے ارکان نے پولیس کو بتایا کہ پٹنہ کی بیور جیل میں راجیو سنگھ عرف پلو نامی قیدی کی ہدایت پر بینک لوٹے گئے۔گینگ کے ارکان کا تعلق گیا، سمستی پور اور پٹنہ سے تھا۔ ملزمان نے اعتراف کیا کہ انہوں نے جھارکھنڈ کے علاوہ بہار، راجستھان، مغربی بنگال میں بینکوں کو لوٹا۔

پولیس افسر نے کہا کہ ملزمان نےانکشاف کیا ہے کہ انہوں نے شہروں کے داخلی اور خارجی راستوں کے قریب اور قومی شاہراہوں کے قریب واقع شاخوں، کیش وینز اور زیورات کو نشانہ بنایا تاکہ وہ جرم کرنے کے بعد آسانی سے فرار ہو سکیں۔

تفتیشی ٹیم نے جمشید پور بینک کی ڈکیتی میں استعمال ہونے والی ایک کنٹینر گاڑی اور دو مسروقہ موٹر سائیکلیں برآمد کیں۔ گینگ کے ارکان کنٹینر گاڑی میں مال غنیمت لے کر کولکتہ فرار ہوگئے تھے۔اس کے بعد وہ گاڑی کو مشرقی شہر کے ایک الگ تھلگ مقام پر چھوڑ کر اپنے گھروں کو منتشر ہو گئے۔ ملزمان نے دو پہیوں کے چیسس اور انجن نمبر مکمل طور پر مٹا دیے تھے، تاکہ ان کا آسانی سے سراغ نہ لگایا جا سکے۔

پاک فوج کی ٹیمیں ریلیف آپریشن میں انتظامیہ کی بھرپورمدد کر رہی ہیں،وزیراعلیٰ

وزیراعظم فلڈ ریلیف اکاؤنٹ 2022 میں عطیات جمع کرانے کی تفصیلات

باغی ٹی وی بلوچستان کے سیلاب متاثرین کی آواز بن گیا ہے.