fbpx

کرونابھارت کےلیےایٹم بم سےزیادہ خطرناک بن گیا:ہرطرف لاشیں ہی لاشیں،کرونامریض سڑکوں کےکنارے مرنےلگے

نئی دہلیکرونا بھارت کے لیے ایٹم بم سے زیادہ خطرناک بن گیا:ہرطرف لاشیں ہی لاشیں،کرونا مریض سڑکوں کے کنارے مرنے لگے:اطلاعات کے مطابق مودی کی وجہ سے بھارت کورونا کا جہنم بن گیا، صورتحال بے قابو ہو چکی، ہسپتالوں میں آکسیجن کا ذخیرہ ختم ہونے کے قریب، بھارت کرونا پھیلاو کے حوالے سے دنیا کا سب سے خطرناک ملک بن گیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں کورونا وائرس کی وبا سنگین صورتحال اختیار کرچکی ہے جہاں ایک دن میں ریکارڈ 3 لاکھ 14 ہزار سے زائد کیسز رپورٹ ہوگئے جبکہ مجموعی طورپرپچھلے چاردنوں میں کرونا کیسزکی تعداد گیارہ لاکھ سے تجاوزکرگئی ہے ، دوسری طرف بھارت سمیت عالمی دنیا نے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے پہلے دنیا کے کسی بھی ملک میں رپورٹ ہونے والے یومیہ کیسز کی تعداد اتنی نہیں رہی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق دہلی حکومت کے آن لائن ڈیٹا بیس نے بتایا کہ دو تہائی سے زیادہ ہسپتالوں میں خالی بستر نہیں ہیں اور ڈاکٹروں نے مریضوں کو گھر پر ہی رہنے کا مشورہ دیا ہے۔مغربی شہر احمد آباد میں میڈیکل ایسوسی ایشن کے صدر ڈاکٹر کرت گڈھوی نے بتایا کہ صورتحال انتہائی نازک ہے۔کورونا کے مریض ہسپتالوں میں بستر کے حصول کے لیے جدوجہد کر رہے ہیں۔

 

ویسے توپورے بھارت میں ہرطرف تباہی ہی تباہی نظرآرہی ہے ، کرناٹک میں‌توصورت حال اس قدر خراب ہے کہ مریض سڑکوں کے کنارے تڑپ تڑپ کرمررہے ہیں اورکوئی ان کوپوچھنے والا نہیں ہے

انہوں نے بتایا کہ خاص طور پر آکسیجن کی شدید قلت ہے۔امریکا میں جنوبی کیرولائنا کی میڈیکل یونیورسٹی اسسٹنٹ پروفیسر کرتیکا کپپلی نے ٹویٹر پر کہا کہ یہ بحران صحت کی دیکھ بھال کے نظام کے خاتمے کا باعث ہے۔امریکا میں جنوری میں ایک دن میں 2 لاکھ 97 ہزار 430 کورونا سے متاثرہ مریضوں کا اضافہ ہوا تھا۔وزارت صحت کے تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق بھارت میں اب مجموعی طور پر ڈیڑھ کروڑ سے زائد افراد کورونا سے متاثر ہوچکے ہیں۔

حکام کے مطابق کورونا سے گزشتہ 24 گھنٹے کے دوران 2 ہزار 104 افراد ہلاک ہوگئے اس طرح ہلاک شدگان کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 84 ہزار 657 ہوگئی۔

شمشان گھاٹوں پرلاشیں رکھنے کی جگہ نہیں ، گھروں کے گھرلٹ گئے کوئی میت کوگھرسے نکالنے والانہیں ہے

دوسری طرف یہ بھی معلوم ہوا ہےکہ بھارتی فوج بھی اس کی پکڑمیں آئی ہوئی لیکن بھارتی فوج میں کرونا کی تباہی کے اعدادوشمارکومیڈیا پرلانے سے روکا جارہاہےاورکہا جارہا ہےکہ بڑے بڑے فوجی افسران بھی جاں بحق ہوچکےہیں

ادھر ماہرین نے خبردارکیا ہےکہ کرونا بم نے جوتباہی اس وقت بھارت میں پھیلا رکھی ہے اگربھارت میں ایٹم بم گرایا جاتا توشاید اتنی تباہی نہ ہوتی جتنی کرونا وائرس نے بھارت کے گھر گھرمیں تباہی پھیلا دی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.