کرونا وائرس، ہسپتال کے ایم ایس بھی کرونا کا شکار بن گئے

کرونا وائرس، ہسپتال کے ایم ایس بھی کرونا کا شکار بن گئے

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ایم ایس فاطمہ جناح اسپتال کوئٹہ کے ڈاکٹر نور اللہ میں کرونا کی تشخیص ہوئی ہے، جس کے بعد ڈاکٹر نے خود اپنے گھر میں قرنطینہ کرلیا ہے۔

فاطمہ جناح ہسپتال کے ایم ایس نے کرونا کی تصدیق کے بعد جاری بیان میں کہا کہ بلوچستان میں دس مارچ کو کورونا کا پہلا کیس سامنے آیا تھا،اس دوران میں نے دن رات ہسپتال میں رہ کر لوگوں کی خدمت کی ہے،اب بھی جلد صحت یاب ہوکر پھر سے عوام کی خدمت کروں گا۔

ایم ایس فاطمہ جناح اسپتال ڈاکٹر نوراللہ نے عوام سے اپیل کی کہ خدارا احتیاط کریں صورتحال ٹھیک نہیں ہے ، گھروں میں رہیں اور لاک ڈاؤن کے حوالہ سے حکومتی احکامات کی پابندی کریں.

دوسری جانب حکومت بلوچستان نے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کے لیے سخت ایکشن لیتے ہوئے انہیں گرفتار کرکے قرنطینہ مراکز منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ترجمان بلوچستان حکومت لیاقت شاہوانی کا کہنا ہے کہ بلوچستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں اب تک لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی پر 2700 دوکانیں سیل کی جاچکی ہیں۔ بلوچستان میں کورونا کے کیسز میں تشویشناک حد تک اضافہ ہو رہا ہے اس لیے کرونا کے پھیلاؤ کو روکنے لئے لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کو گرفتار کرکے قرنطینہ مراکز منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

لیاقت شاہوانی کا کہنا تھا کہ اگر عوام نے تعاون نہ کیا تو صوبے میں مکمل لاک ڈاؤن کی طرف بھی جاسکتے ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.