fbpx

یومِ آزادای کے موقع پراہل پاکستان کےلیےتحفہ:ملک کی پہلی الیکٹرک کار متعارف

کراچی :روشنیوں کے شہر کراچی میں پاکستان کے 75ویں یومِ آزادی کے موقع پر ملک کی پہلی الیکٹرک کار کی رونمائی کردی گئی۔پاکستان کی 75ویں سالگرہ پر، ڈائس فاؤنڈیشن(DICE) نے ملک کی پہلی نور ای سیونٹی فائیو( Nur-E 75 ) متعارف کرا دی ہے۔

 

’’میڈان پاکستان الیکٹرک کار‘‘اوورسیز پاکستانیوں کا کمال:انقلاب آگیا

الیکٹرک گاڑی کوڈائس فاؤنڈیشن نے تیار کیا جو پاکستانی تارکین وطن کی طرف سے چلائی جانے والی امریکہ میں قائم ایک غیر منافع بخش تنظیم ہے، گاڑی کو تیار کرنے میں مقامی تعلیمی اداروں اور صنعت کی مدد بھی حاصل کی گئی ہے۔پاکستان کی پہلی الیکٹرک کار کا نام Nur-E رکھا گیا ہے جبکہ الیکٹرک کار کمپنی کا نام (JaXari ) ایک 12ویں صدی کے سائنسدان اسماعیل الجزری کے نام پر رکھا گیا ہے۔

 

 

اس الیکٹرک کار کی اہم خصوصیات میں 5 سیٹیں ہیں، رفتار کی بات کی جائے تو یہ کار 107ایچ پی 80 کے ڈبلیو ہے، ویل/ ٹائروں کا سائز آر 16 205/55، چارجنگ 7 سے 8 گھنٹے ہے جبکہ فاسٹ چارجنگ دو گھنٹے میں ہوجاتی ہے۔

 پاکستان میں پہلی دفعہ کوریا سے امپورٹ کی جانے والی الیکٹرک کاریں حادثے کا شکار

گاڑی کی قیمت کا فیصلہ ابھی کمپنی کی جانب سے نہیں کیا گیا مگر امکان ہے جلد ہی اس کی قیمت بھی سامنے آجائے گی۔نقاب کشائی کی تقریب آج شام 4.00 بجے شروع ہوئی اور پروٹو ٹائپ کو چمک دھمک سے دکھایا گیا۔

 

تیز بارش آندھی کے باوجود کے الیکٹرک کی زبردست کارکردگی سامنے آگئی

Nur-E ابھی ابتدائی مرحلے میں ہے لیکن یہ پاکستانی آٹو موٹیو انڈسٹری کی طرف سے اٹھایا جانے والا ایک عظیم اور اپنی نوعیت کا پہلا اقدام ہے۔ DICE فاؤنڈیشن تجارتی طور پر پروٹو ٹائپ تیار کرنے کے لیے کافی سرمایہ کاری کرنےکا ارادہ رکھتی ہے، جس میں 3 سال لگ سکتے ہیں۔