سی پیک منصوبے، وزیراعظم نے ایسا اعلان کر دیا کہ جان کر چین بھی حیران رہ جائے

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرصدارت پاک چین اقتصادی راہداری کےتحت جاری منصوبوں پرجائزہ اجلاس ہوا.

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اجلاس میں پورٹ قاسم کول فائرڈپاورپلانٹ، گوادر پاور پلانٹ، کوہالہ ہائیڈروپاورپراجیکٹ پر گفتگو ہوئی، شرکا کوایم ایل ون،گوادرپورٹ و دیگر اہم منصوبوں پراب تک کی پیشرفت سےآگاہ کیاگیا ،اجلاس میں پاک چین اقتصادی راہداری کےتحت توانائی، انفرااسٹرکچر،اورنج لائن منصوبوں پربریفنگ دی گئی، حبکوتھرکول پاورپراجیکٹ ،تھر کول پاور پراجیکٹ جیسے اہم منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا

اجلاس میں وزیرِ منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار، وزیرِ مواصلات مراد سعید، وزیرِ توانائی عمر ایوب خان، مشیر تجارت عبدالرزاق داو¿د، معاون خصوصی ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان، معاون خصوصی ندیم بابر، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ، متعلقہ وفاقی وزارتوں کے سیکرٹری صاحبان، چیف سیکرٹری پنجاب، چیف سیکرٹری بلوچستان، ایڈیشنل چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا و دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔

وزیر برائے منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے اجلاس کو پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت توانائی، انفراسٹرکچر، پاکستان ٹیلی ویژن کو ڈیجیٹل بنانے کے منصوبے، اورنج لائن، ایم ایل -ون، گوادر پورٹ اور دیگر اہم منصوبوں پر اب تک کی پیش رفت سے آگاہ کیا۔ توانائی کے شعبے میں پورٹ قاسم کول فائرڈ پاور پلانٹ، گوادر پاور پلانٹ، کوہالہ ہائیڈروپاور پراجیکٹ، حبکو تھر کول پاور پراجیکٹ اور تھر کول پاور پراجیکٹ جیسے اہم منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ لیا گی

اجلاس میں سکھرملتان موٹروے،تھاہ کوٹ حویلیاں سیکشن،ایسٹ بےایکسپریس وےپر گفتگو کی گئی،نیوگوادرانٹرنیشنل ایئرپورٹ،ایم ایل ون ، ڈی آئی خان ژوب منصوبوں پر تفصیلی بات چیت کی گئی،وزیراعظم کوبتایا گیا کہ ملتان سکھرموٹروے مکمل کیا جا چکا ہےجلد باقاعدہ افتتاح کیاجائےگا ،

وزیراعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ دونوں ممالک کی تزویراتی پارٹنرشپ کا عملی نمونہ ہے ،سی پیک کے تحت مختلف شعبوں میں جاری منصوبوں کی مقررہ ٹائم فریم میں تکمیل اولین ترجیح ہے ،منصوبوں پربلا تعطل پیشرفت یقینی بنانےکیلیے سی پیک اتھارٹی کاقیام عمل میں لایاجارہاہے ،پاک چین اقتصادی راہداری کی تکمیل سےنہ صرف دونوں ممالک بلکہ پوراخطہ مستفید ہوگا،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.