fbpx

کوئٹہ میں سی ٹی ڈی کی بڑی کاروائی،خودکُش بمبارگرفتارکرلیا،خطرناک انکشافات

کوئٹہ:کوئٹہ میں سی ٹی ڈی کی بڑی کاروائی،خودکُش بمبارگرفتارکرلیا،خطرناک انکشافات،اطلاعات کے مطابق کوئٹہ میں‌ آج دہشت گردی کی ایک بڑی کارروائی ناکام بنا دی گئی ہے ، ادھر اس حوالے سے مزیدمعلوم ہوا ہے کہ سی ٹی ڈی کو اطلاع ملی کے دہشتگرد دھماکہ کرنے جا رہے ہیں،

ترجمان سی ٹی ڈی کے مطابق خفیہ اطلاع پر موٹر سائیکل سوار کو روکا اور چیک کیا،چیک کرنے پر موٹر سائیکل میں IED کو نصب پایا، BD نے IED بم کو ناکارہ بنایا، ترجمان سی ٹی ڈی کے مطابق گرفتار ہونے والے ملزم کی شناخت نظام الدین عرف خالد کے نام سے ہوئی، ملزم نے انکشاف کیا کہ وہ ہائی کورٹ سیشن کورٹ ایف سی اور پولیس پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے،

ترجمان سی ٹی ڈی نے مزید انکشاف کیا کہ ملزم نے بتایا 8 ساتھیوں پر مشتمل گروپ نے مختلف دہشت گرد کاروائیاں کیں، ڈی آئی جی ٹیلی حامد شکیل پر خودکش حملے میں یہی گروپ ملوث تھا ملزم کا آر آر جی فورس کے ٹرک اور میکانگی روڈ ایف سی کی گاڑی پر آئی ای ڈی دھماکے کا اعتراف بھی کیا ہے ، اس کے ساتھ ساتھ سرینا ہوٹل کار پارکنگ میں خودکش دھماکے میں بھی یہی گروپ ملوث تھا،

سی ٹی ڈی ترجمان کے مطابق بی اے مال کے قریب پاک فوج کے ٹرک پر آئی ای ڈی دھماکے کا بھی اعتراف،ملزم نے یونیورسٹی چوک سریاب میں بی سی پولیس کے ٹرک پر آئی ای ڈی حملے کا بھی اعتراف کیا، قندہاری بازار بخاری سینٹر کے باہر موٹر سائیکل ایک آئی ڈی دھماکے میں بھی یہی گروپ ملوث تھا،سائنس کالج کے مین گیٹ پر جمعیت نظریاتی پر آئی ای ڈی دھماکے کا بھی اعتراف کیا ہے ملزم نے فاطمہ جناح روڈ پر دکان میں ہزارہ ٹارگٹ کلنگ کا بھی اعتراف کیا، ملزم کے دیگر ساتھیوں کے لیے مختلف چھاپے مارے جا رہے ہیں،