fbpx

سائبر کرائم میں اضافہ،چار ماہ میں کتنی شکایات درج ہوئیں؟

لاہور میں سائبر کرائم میں اضافہ،چار ماہ میں کتنی شکایات درج ہوئیں؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں سائبر کرائم میں اضافہ ہو گیاہے،

4ماہ کے دوران ایف آئی اے کو 5 ہزار شکایات موصول ہوئیں 80فیصدشکایات فیس بک، واٹس ایپ کے ذریعے فراڈ اور بلیک کرنے کی موصول ہوئیں ،فنانشل فراڈ کی 10 ، انفرادی اکاوَنٹ ہیک کرنے کی 2 فیصد شکایات موصول ہوئیں ،ایف آئی اے کے مطابق رواں سال ایک ہزار 200 شکایات پر انکوائری شروع کی گئی ،ایک تفتیشی افسر کےپاس 3سے400 شکایات التوا کا شکار ہیں،سائبر کرائم سرکل لاہور میں مجموعی 60 افسران و اہلکار تعینات ہیں،،60 افسران 5ہزار سے زائد شکایات کی تفتیش اور انکوائری کر رہے ہیں،کیس کی انکوائری لگنے میں دیر نہیں لگتی، مکمل ہونے میں وقت لگ جاتاہے،

ٹویٹر پر جعلی اکاؤنٹ، قائمہ کمیٹی اجلاس میں اراکین برہم،بھارت نے کتنے سائبر حملے کئے؟

بیس ہزار کے عوض خاتون نے ایک ماہ کی بیٹی کو فروخت کیا تو اس کے ساتھ کیا ہوا؟

بھارت ، سال کے ابتدائی چار ماہ میں کی 808 کسانوں نے خودکشی

سال 2020 کا پہلا چائلڈ پورنوگرافی کیس رجسٹرڈ،ملزم لڑکی کی آواز میں لڑکیوں سے کرتا تھا بات

فیس بک، ٹویٹر پاکستان کو جواب کیوں نہیں دیتے؟ ڈائریکٹر سائبر کرائم نے بریفنگ میں کیا انکشاف

ڈائریکٹر سائبر کرائم عبدالرب چودھری کا کہنا ہے کہ شکایات زیادہ ہونے اور ڈیٹا لیٹ ملنے کی وجہ سے انکوائریز التوا کا شکار ہوتی ہیں کوشش کر رہے ہیں سے کہ التوا ہونے والی انکوائریز کو مکمل کیا جائے،

سائبر کرائم ونگ کی کاروائی، چائلڈ پورنوگرافی میں ملوث تین ملزمان گرفتار

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.