fbpx

دانت اوورل کویٹی اور اسکی حفاظت(1) تحریر: ڈاکٹر نبیل چوھدری

ٹویٹر ھینڈل : @nabthedentist

اللہ نے انسان کو اسکے جسم کو اسکی ھر ایک سانس کو قیمتی بنایا ھے اسکی حفاظت کرنا اسکا خیال رکھنا انسان پر ویسے ھی فرض ھے جیسے انسان کے لئے اعمال صالحہ کرنا انسان کا جسم اللہ کی امانت ھے اللہ خوبصورتی جمال اور طہارت کو پسند کرتا ھے اور صفائ رکھنے والے انسانوں کو اپنا محبوب رکھتا
جسم کے تمام حصوں کی اپنی اہمیت ایسے ھی دانتوں کی بھی اہمیت ھے انکو روزانہ کم از کم دو بار صاف رکھنا ایک صبح ناشتے کیبعد ایک رات سونے سے پہلے انتہائ ضروری ھے انسان کے منہ میں زندگی میں دو بار دانت آتے پہلی بار 20 اور اگلی بار 32 پہلی بار جب دانت نکلتے تو ھم انکو دودھ کے دانت کہتے یہ چھوٹے جبڑے کے عین مطابق چھوٹے ھوتے اور پھر ابھی یہ موجود ھی ھوتے تو پیچھے پکی ڈارھیں نکلنا شروع ھوجاتی 13 سال کی عمر میں قریبی سارے پکے دانت نکل آتے سب سے آخری ڈارھ جسکو ھم عقل ڈارھ بھی کہتے وہ عموما جوانی میں نکلتی کئیوں کی یہ نکلتی بھی نھیں اور کئ کی خراب نکلتی اور پھر سرجری کرکے نکلوانی پڑھتی

بطور ڈینٹل سرجن اس پلیٹ فارم کے ذریعے میں پیدائش سے لیکر دانتوں کی مکمل عمر پہنچ جانے کے مراحل انکے مسائل اور ان سے جڑے مسئلوں کے حل پر ایک سیرپا گفتگو کرونگا جسکا مقصد لوگوں میں علم شعور پہنچانے کی اپنے تئیں کوشش ھوسکے کہ دانتوں کی کونسی بیماریاں ھیں انکا حل کیا ھے کب مریض کو ڈینٹسٹ پاس جانا چاہئے اور گھر پر ایسا کیا کریں کہ یہ مسئلے دوبارہ سر نا اٹھا پائیں
بچوں میں جیسا کہ میں نے بتایا بچپن میں 20 دانت نکلتے دس اوپر والے جبڑے اور دس نیچے والوں میں تو 5 سال کی عمر سے لیکر 12 سال کی عمر ایسی ھوتی ھے جس میں زیادہ تر بچے دانتوں میں کیڑا لگنے کی شکایت کیساتھ ڈینٹسٹ کے پاس جاتے ھیں درحقیقت دانت بچپن سے خراب جورے تھے اثرات اس عمر میں آتے بچوں کے دانتوں کا سب سے بڑا دشمن فیڈر ھے اگر میرا بس چلے تو مارکیٹ میں جتنی کمپنیز ھیں انکے فیڈرز کو آگ سے جلادوں یہی بچوں میں rampant caries نامی بیماری پیدا کرتے یہی دانت ٹیرے کرنے میں سب سے زیادہ کردار ادا کرتے بچوں کونتکالیف درد جن کیسز میں آتا ان میں 90 فیصد فیدر استعمال کرتے بچے ھی ھوتے دوسری غلطی بچوں کے مناسب دانت صفائ نا کرنا انکو دانت صاف کرنے کا سلیقہ طریقہ نا سکھانا ھے اور جو دانت صاف کر رھے ھوں بچے انکو ھائ فلورایئڈ والے ٹوتھ پیسٹ سے دانت صاف کروانا ھے

بچوں کا بچوں والا ٹوتھ پیسٹ دیں ٹوتھ برش دیں اور دانت دو بار صاف نھین کروانے بلکہ ھر بار جب وہ کچھ میٹھا کھائیں یا باھر کا۔کچھ کھائیں تب صاف کروانے ھیں
بچہ 11 سال کا جب ھوجاتا یا اسکے canine جو نوکیلے دانت ھوتے وہ نکل آئیں تو اسوقت اگر آپکو لگے کے بچے کے دانت ٹیڑھے ھیں تو آپ ڈینٹل سرجن پاس جائیں ایک اچھا ڈینٹسٹ ایک اچھا صاف ستھرا کلینک اور ایک اچھی ٹریٹمنٹ بچوں کیلئے ھمیشہ ترجیحی بنیاد پر ھونے چاہئے