fbpx

جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر کے باہرسڑک پر لیٹ کرسید علی گیلانی کی جبری تدفین کے خلاف لوگوں کا مظاہرہ

جنیوا:جنیوا میں اقوام متحدہ کے دفتر کے باہرسڑک پر لیٹ کرسید علی گیلانی کی جبری تدفین کے خلاف لوگوں کا مظاہرہ ،اطلاعات کےمطابق جنیوا میں اقوام متحدہ کی ہیومن رائٹس کونسل کے صدر دفتر کے باہر قائد تحریک آزادی کشمیر سید علی گیلانی کی جبری تدفین کے خلاف بڑا احتجاج کیا گیا۔

جنیوا میں اقوام متحدہ دفتر کے باہر شرکا نے کفن کے ساتھ لیٹ کر میت کی صورت میں احتجاج کیا۔ مظاہرین نے مرحوم سید علی گیلانی کی تصاویر بھی اٹھا رکھی تھیں۔ مظاہرین کے بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج کیا۔ کشمیری نوجوانوں کا قتل روکنے اوراقوام عالم کو بیدار ہونے کا مطالبہ کیا گیا۔

 

 

اس میں مظاہرین نے بھارت کے کشمیر میں مظالم کے خلاف اور کشمیر کے آزادی کے حق میں بھر پور نعرے بازی کی۔

احتجاجی مظاہرین کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کمیشن کی حالیہ دو رپورٹس نے بھارت کے ظالمانہ چہرے کو بے نقاب کیا ہے اب وقت آگیا ہے کہ اقوام متحدہ کشمیریوں کے پیدائشی اور جائز حق خوداردایت دلوانے کے لیے بھارت کو مجبور کرے۔

اس موقع پر احتجاجی مظاہرین کاکہنا تھا کہ سید علی شاہ گیلانی کے معاملے پر اقوام متحدہ کو اس پر نوٹس لینا چاہیے اس ایشو پر اقوام متحدہ کی خاموشی مجرمانہ ہے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!