fbpx

ڈپٹی اسپیکر پنجاب اسمبلی نےاپنی سکیورٹی کیلیے چیف سیکرٹری کو خط لکھ دیا

لاہور:پنجاب اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر نے چیف سیکرٹری کو خط لکھ کرکل کے اجلاس کے‌حوالے سے اہم اطلاع بھی دے دی اور ساتھ اس فریق کی طرف اشارہ کیا ہے جو کل کا اجلاس نہیں ہونے دینا چاہتا،اس حوالے سے پنجاب اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر دوست مزاری نے جان کو لاحق خطرے کے پیشِ نظر چیف سیکرٹری کو سکیورٹی کے لیے خط لکھ دیا ہے۔

ڈپٹی اسپیکر صوبائی اسمبلی کے خط پر 22 جولائی کی تاریخ درج ہے۔ جبکہ آج اکیس جولائی کا دن ہے ، یہ بھی نقطہ اب بڑا زیربحث ہے کہ کل کہیں کوئی گڑبڑ ہی نہ ہوجائے

دوست مزاری نے خط میں مؤقف اختیار کیا کہ پنجاب اسمبلی میں وزیر اعلیٰ کے انتخاب کے دوران سکیورٹی فورسز تعینات کی جائے، اسمبلی کی سیکیورٹی کے لیے خط عدلیہ کے حکم کی تعمیل میں ہے۔

موجودہ چیف الیکشن کمشنر کی نگرانی میں عام انتخابات میں حصہ نہیں لیں گے،عمران خان

انہوں نے لکھا کہ ایوان کی کارروائی کے دوران کچھ عناصر رکاوٹیں ڈال رہے ہیں، ایوان کی کارروائی اور مجھے ایوان کی کارروائی چلانے سے روکا جا رہا ہے، وزیراعلیٰ کے انتخاب کے عمل میں رکاوٹ ڈالی جا رہی ہے۔

وزیراعلی پنجاب کا انتخاب،آصف زرداری کی شجاعت حسین سے دوسری اہم ملاقات

خط کے مطابق ’ایوان میں پُر تشدد سرگرمیوں سے میری جان کو خطرہ ہے، ایوان کے اندر اور احاطے میں مطلوبہ فورسز کی تعیناتی کی درخواست کر رہا ہوں‘۔

یاد رہے کہ پنجاب اسمبلی میں وزیر اعلیٰ پنجاب کے لیے پاکستان تحریک انصاف اور مسلم لیگ (ق) کو واضح برتری حاصل ہے

نجاب اسمبلی کے نو منتخب ارکان نے حلف اٹھا لیا،کل پرویز الہی واضح اکثریت سے وزیر اعلی منتخب ہوںگے