fbpx

ڈالر کی اونچی اُڑان؛ پاکستانی روپے کی قدر مزید کم ہوگئی

الر کی اونچی اُڑان، پاکستانی روپے کی قدر مزید کم ہوگئی.

پاکستانی روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی اونچی اٗڑان کا سلسلہ جاری ہے۔ فاریکس ڈیلرز ایسوسی ایشن کے مطابق آج صبح کاروبار کے آغاز میں ہی انٹربینک میں ڈالر مہنگا ہوگیا۔ انٹربینک میں کاروبار کے دوران ڈالر 34 پیسے مہنگا ہونے کے بعد 222روپے 75 پیسے کا ہوگیا ہے۔ واضح رہے کہ وزیر خزانہ بننے کے بعد اسحاق ڈار نے دعویٰ کیا تھا کہ 30 اکتوبر سے پہلے پہلے ڈالر 200 روپے سے نیچے آجائے گا تاہم اب بھی ڈالر 223 روپے پر ہے۔


دوسری جانب اسٹیٹ بینک کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق حکومت نے ستمبر میں مجموعی طور پر 49 ہزار 399 ارب روپے کا قرضہ لیا جو اس سے پچھلے ماہ اگست کے مقابلے میں 0.2 فیصد کم ہے، حکومت نے اگست میں 49 ہزار 617 ارب روپے کا قرضہ لیا تھا۔ سالانہ بنیادوں پر دیکھا جائے تو ستمبر2021 کے مقابلے میں یہ قرض 22.7 فیصد زیادہ ہے، پچھلے سال ستمبر میں حکومت کی جانب سے لئے گئے قرضے کی مجموعی مالیت 40 ہزار 269 ارب روپے تھی۔
مزید یہ بھی پڑھیں؛
سعودی عرب نےانسداد وبائی امراض کیلئےعالمی فنڈ میں 5 کروڑ ڈالرعطیہ کرنےکا اعلان کیا
سکھر حیدرآباد موٹر وے منصوبےکی رقم میں پونے 2 ارب روپےکی مبینہ کرپشن کا انکشاف
جلسے کی وجہ سڑک بند ہونے سے مشکلات محمود خان اور مراد سعید کے خلاف درخواست درج
راولپنڈی پولیس کو شیخ رشید پر حملے کی کال موصول،شیخ رشید کی سیکیورٹی بڑھا دی گئی
بچپن میں پریشان کن اور برے حالات جوانی میں امراض قلب کا باعث بن سکتے ہیں ،تحقیق
تاہم خیال رہے کہ گزشتہ روز جبکہ انٹربینک میں ڈالر 22 پیسے مہنگا ہوا تھا۔ انٹربینک میں کاروبار کے اختتام پر ڈالر کا بھاؤ 221.91 روپے رہا۔ انٹربینک میں گذشتہ روز ڈالر 221.69 روپے پر بند ہوا تھا۔ اس کے علاوہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر کا بھاؤ 227 روپے 75 پیسے پر برقرار ہے۔ جبکہ خیال رہے کہ چھ روز قبل انٹر بینک مارکیٹ میں کاروبار کے دوران ڈالر کی قیمت میں کمی دیکھنے میں آئی تھی ۔تفصیلات کے مطابق انٹر بینک مارکیٹ میں کاروبار کے آغاز کے کچھ ہی دیر کے بعد ڈالر کی قیمت میں 15 پیسے کمی ہوئی تھی جس کے بعد ڈالر 221.50 روپے کا ہو گیا تھا۔ گزشتہ روز کاروبار کے اختتام پر ڈالر 221.65 روپے پر بند ہوا تھا ۔