ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ

ڈالر کی قیمت میں مزید اضافہ

باغی ٹی وی : ملک بھر میں رواں ہفتے کے پہلے کاروباری روز کے دوران ایک مرتبہ پھر روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں 60 پیسے کا اضافہ دیکھا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں گزشتہ ایک ماہ کے دوران سے امریکی ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافہ دیکھنے کو مل رہا ہے، جس کے بعد روپیہ تنزلی کی طرف گامزن ہے۔

اوپن مارکیٹ میں ڈالر تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، اوپن مارکیٹ میں ڈالر60 پیسے مہنگا ہو کر 169 روپے کی سطح پرپہنچ کر بند ہوا۔

دوسری طرف انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی کرنسی کی قیمت میں 51 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد ڈالر کی نئی قیمت 168 روپے 38 پیسے کی سطح پر پہنچ کر بند ہو گئی ہے۔

معاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ ملکی کرنسی میں مزید تنزلی کا امکان ہے، قوی امکان ہے کہ روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر کی قدر میں آئندہ چند روز کے دوران مزید اضافہ دیکھنے کو ملا اور امریکی ڈالر 170 روپے سے بھی تجاوز کر سکتا ہے۔

واضح‌رہےکہ اپریل 2019 میں ڈالر نے بڑی چھلانگ لگئی اور 141 روپے 50 پیسے پر آ گیا۔ مئی میں اس کی قیمت میں تاریخ کا ایک بڑا اضافہ دیکھا گیا اور یہ 151 روپے تک پہنچ گیا۔جون میں ڈالر نے تمام ریکارڈ توڑ دیے اور تاریخ کی بلند ترین سطح 164روپے پر پہنچ گیا۔جولائی 2019 میں ڈالر کی اڑان رک گئی اور ڈالر کمی کے بعد انٹربینک میں 160 روپے اور اوپن مارکیٹ میں 161 روپے کا ہوگیا۔

اکتوبر 2019 کے اختتام پر روپے کی قدر مزید بہتر ہوئی اور ڈالر کی قیمت 155.70 روپے رہ گئی۔ نومبر2019 کے اختتام پر ڈالرکی قیمت خرید 155.25 اور قیمت فروخت 155.65 تھی۔ گزشتہ چھ ماہ سے ڈالر کی قیمت میں مسلسل کمی دیکھنے میں آرہی ہے اور اس دوران 9 روپے کی کمی آئی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.