fbpx

ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کا فیصلہ،سرنجوں کے استعمال پر پابندی

قصور
ڈریپ کی طرف سے بغیر لاک سرنج کے استعمال پر پابندی،فیکٹریوں کی طرف سے آٹو لاک سرنج کی پروڈکشن زور شور سے جاری تاہم مارکیٹ میں وہی پرانی سرنج موجود اور قیمتیں ڈیلروں کی مرضی کیں

تفصیلات کے مطابق ڈریپ ( ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی پاکستان) نے 30 نومبر 2021 کے بعد ڈسپوزیبل سرنج پرانی طرز بغیر لاک کے 2 سی سی 5۔2 سی سی 3 سی سی اور 5 سی سی کی سیل اور استعمال پر پابندی لگا دی ھے اور تمام ڈرگ انسپیکٹروں کو پابند کیا ھے 30 نومبر کے بعد اگر یہ اسٹاک کہیں ملا تو اس اسٹاک کو تلف کیا جائے اور قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے نیز نئی آٹو لاک سرنج کے استعمال کو یقینی بنوایا جائے
میڈیکل انسٹرومنٹس فیکٹریوں نے نئی آٹو لاک سرنج کی پروڈکشن زور شور سے شروع کر دی ہے تاہم موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے پرانی بغیر لاک سرنج کی کمی کا بہانہ بنا کر قیمتیں بڑھا دی ہیں جس سے ہول سیل ڈیلر و میڈیکل سٹور مالکان مہنگے داموں سرنجیں خریدنے پر مجبور ہو گئے ہیں
آٹو لاک سرنج کی پابندی کے احکامات جاری کرنا انتہائی خوش آئند بات ہے اس سے سرنج ایک مرتبہ استعمال ہوتے ہی آٹو میٹک طور پر لاک ہو جائے گی اور دوبارہ استعمال کے قابل نہیں رہے گی تاہم گورنمنٹ فی الوقت پرانی طرز کی سرنجوں کے مصنوعی بحران کو پیدا کرنے والی فیکٹریوں کے خلاف کاروائی کرے

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!