fbpx

دعا زہرا کو بیچنے کے لیے ورغلا کر کراچی سے بلوایا گیا، اقرارالحسن کا تہلکہ خیز انکشاف

دعا زہرا کو بیچنے کے لیے ورغلا کر کراچی سے بلوایا گیا، اقرارالحسن کا تہلکہ خیز انکشاف

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کراچی سے بھاگ کر شادی کرنے والی دعا زہرہ کے بارے میں اینکر اقرار الحسن نے اہم انکشافات کئے ہیں

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے اینکر اقرار الحسن کا کہنا تھا کہ دعا زہرا کو ظہیر اور اس کے گینگ نے جسم فروشی کے اڈے پر بیچنے کے لئے ورغلا کر بُلایا تھا۔ والدین نے ہمت کر کے میڈیا پر آواز اُٹھائی تو اس گینگ کو مجبوراً اسے شادی ظاہر کرنا پڑا۔ میں نے اس ویڈیو سے پہلی دعا زہرا کیس پر بات نہیں کی۔ میری تحقیق اس ویڈیو میں،

ویڈیو میں اقرار الحسن کہتے ہیں کہ ان کی تحقیق کے مطابق یہ معاملہ اتنا سیدھا نہیں ہے جتنا دکھائی دے رہا ہے دعا زہرہ کو اغوا کیا گیا ہے اور وہ ایک گینگ کے پاس موجود ہیں چونکہ یہ معاملہ اتنا زیادہ اچھل گیا اور والدین نے ہمت کرکے میڈیا پر آواز اٹھائی اسی لیے دعا زہرہ ابھی تک جسم فروشی کے کسی اڈے پر نہیں بکی اور اسے گھریلو بیوی بنا کر فی الحال رکھنا پڑا ہے لیکن دعا کا مستقبل اب بھی تاریک ہے وہ اللہ کی ذات کو حاضر ناظر جان کر کہتے ہیں کہ ظہیر احمد جیسے بدبخت لوگ دعا جیسی بچیوں کو شادی کا جھانسہ دے کر بلاتے ہیں اور آگے انہیں گینگ در گینگ جسم فروشی اور بدکاری کے کاموں کیلئے بیچ دیا جاتا ہے اس کیس میں بھی ایسا ہی ہونے جا رہا تھا لیکن دعا کے والدین نے ہمت دکھائی اور معاملے کو سوشل اورمین سٹریم میڈیا پر اجاگر کیا

اقرار الحسن کا مزید کہنا تھا کہ جب سے یہ معاملہ شروع ہوا ہے وہ اس پر خاموش تھے کیونکہ ان کے پاس کوئی ثبوت نہیں تھے لیکن اب ان کے پاس شواہد آگئے ہیں آگے چل کر وہ ایک ایک کردار کو ثبوت کے ساتھ بے نقاب کریں گے آج سے وہ اس معاملے کو موضوعِ بحث بنائیں گے اور اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ آئندہ کوئی بھی بچی کسی کے بھی ورغلانے سے دعا زہرہ جیسی خطرناک صورت حال میں نہ پھنسے

ایک اور ٹویٹ میں اقرار الحسن کا کہنا تھا کہ جسم فروشی کے اڈوں پر بکنے کے لئے ورغلا کر بلائی جانے والی بچیوں کو تھوڑی بتایا جاتا ہے کہ انہیں اغواء کر لیا گیا ہے، انہیں تو پیار محبت سے رام کیا جاتا ہے یہاں تک کہ ان سے نکاح تک کیا جاتا ہے اور پھر انہیں اس آگ میں جھونکا جاتا ہے، یہاں ماں باپ کے شور کی وجہ سے یہ نوبت نہیں آئی

 دعا زہرہ نے والدین سے ایک بار پھر صلح کی اپیل کی ہے

دعا زہرہ کے ساتھ جنسی زیادتی ہوئی ہے تو ظہیر کیخلاف قانونی کاروائی کی جائے،والد

کل کہیں گے افغانستان سے سگنل آرہے ہیں تو ہم کیا کرینگے؟ دعازہرہ کیس میں عدالت کے ریمارکس

والدین سے نہیں ملنا چاہتی،دعا زہرہ کا عدالت میں والد کے سامنے بیان

دعا کیجیے گا ہماری دعا ظالموں کے چنگل سے آزاد ہو،دعا زہرہ کے والدین کی اپیل

دعا زہرہ کیس،عمر کے تعین کیلئے ایک بار پھر میڈیکل بورڈ بنانے کا حکم

واضح رہے کہ دعا زہرہ نے گھر سے بھاگ کر شادی کر لی تھی، دعا زہرہ کے شوہر ظہیر احمد کا کہنا ہے کہ کہ دعا اور میرا رابطہ پب جی گیم کے ذریعے ہوا اور پچھلے تین سال سے ہمارا رابطہ تھا دعا زہرہ کراچی سے خود آئی ہے دعا نے میرے گھر کے باہر آکر مجھے میسج کیا وہ رینٹ کی گاڑی پر آئی تھی میرے گھر والے شادی پر آمادہ تھے میرے گھر والے بھی چاہتے تھے کہ دعاکے گھر والے رضامند ہوں لیکن دعا کے گھر والوں نے شادی کیلئے مثبت جواب نہیں دیا اسی وجہ سے یہ خود اپنا گھر چھوڑ کر آ گئی