fbpx

بارشوں اورسیلاب سے تباہ حال بلوچستان میں زلزلے کے جھٹکے

کوئٹہ :بارشوں اورسیلاب سے تباہ حال بلوچستان میں زلزلے کے جھٹکے،اطلاعات کے مطابق بلوچستان کے علاقے خاران میں 3.9 شدت کے زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے، جس کی گہرائی 40 کلو میٹر تھی۔

کوئٹہ سے آمدہ اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ بلوچستان کے علاقے خاران میں زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے، جس کے بعد لوگ خوفزدہ ہوکر گھروں سے نکل آئے۔زلزلہ پیما مرکز کے مطابق زلزلے کی شدت 3.9، گہرائی 40 کلو میٹر تھی جبکہ اس کا مرکز خاران سے 30 کلومیٹر جنوب مغرب کی جانب تھا۔

تاحال زلزلے سے کسی جانی و مالی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ملی۔ واضح رہے کہ بلوچستان مون سون کی معمول سے زیادہ بارشوں کی وجہ سے سیلابی صورتحال سے دوچار ہے، مختلف حادثات و واقعات میں تقریباً 200 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔

چند دن پہلے بھی سیلاب اور بارشوں سے تباہ حال بلوچستان میں زلزلہ آیا تھا، بلوچستان کے علاقے پسنی، گوادر، و گردو نواح میں زلزلے کے خوفناک جھٹکوں سے زمین لزری تو لوگ جان بچانے کیلئے گھروں سے کلمہ طیبہ پڑھتے ہوئے نکل آئے

اس سے پہلے مئی کے مہینےمیں بلوچستان کے ضلع خضدار، لسبیلہ، واشک اور چاغی میں زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس کیے گئے تھے۔ خضدار میں درجنوں کچے مکانات کو بھی نقصان پہنچا تھا

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق چاغی اور واشک میں صبح 5 بج کر 48 منٹ پر زلزلے کے جھٹکے محسوس کیے گئے جس کی شدت 5.1 ریکٹر سکیل اور گہرائی دس کلومیٹر تھی۔ زلزلے کا مرکز چاغی کے ضلعی ہیڈ کوارٹر دالبندین سے 56 کلومیٹر جنوب میں واقع تھا۔