ورلڈ ہیڈر ایڈ

الیکشن کمیشن کے 2 ارکان کی تعیناتی سے متعلق کیس ،سماعت ملتوی

الیکشن کمیشن کے 2 نئے ارکان کی تعیناتی سے متعلق کیس کی سماعت 11اکتوبر تک ملتوی کر دی گئی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے کیس کی سماعت کی ،اسلام آباد ہائی کورٹ میں صدر، وزیراعظم اور وزارت پارلیمانی امور کا جواب جمع نہ ہو سکا ،ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق کھوکھر نے کہا کہ آئندہ10 روز میں جواب جمع کرادیں گے، الیکشن کمیشن کی جانب سے عدالت میں تحریری جواب جمع کروا دیا گیا.

الیکشن کمیشن اور حکومت آمنے سامنے، چیف الیکشن کمیشن کے خلاف ریفرنس دائر کرنیکا فیصلہ

چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ کیا ارکان کی تقرری کے لیے آئینی حدود کو مدنظر رکھا گیا، عدالت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل کوہدایت کی کہ اہم معاملہ ہے جلدی جواب جمع کرائیں، چیف جسٹس نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ کیا آپ نہیں چاہتے کہ الیکشن کمیشن کارآمد ہو. عدالت نے کیس کی سماعت 11 اکتوبر تک ملتوی کر دی

الیکشن کمیشن کے 2 نئے اراکین کی تقرری غیر آئینی، الیکشن کمیشن حکومت کیخلاف ڈٹ گیا

اسلام آباد ہائی کورٹ میں الیکشن کمیشن نے جواب جمع کروا دیا، سیکریٹری الیکشن کمیشن بابر یعقوب کی جانب سے اسلام آباد ہائی کورٹ میں جواب جمع کروایا گیا،الیکشن کمیشن کے جواب کے ساتھ سپریم کورٹ کے فیصلوں کے حوالے بھی دئیے گئے

الیکشن کمیشن کی جانب سے جمع کروائے گئے جواب میں کہا گیا کہ ارکان کی تقرری آئین کے آرٹیکل 213 کی خلاف ورزی ہے،چیف الیکشن کمشنر نے ارکان کا حلف لینے سے انکار کیا،23اگست کو سیکریٹری پارلیمانی امور کو آگاہ کردیا گیا تھا،صدر مملکت نے ارکان کی تقرری کرتے ہوئے 213 اے اور بی کی خلاف ورزی کی ،آرٹیکل 214 میں ارکان کے حلف کا طریقہ کار موجود ہے ،حلف وہ لے سکتا ہے جو بطور رکن تعینات تصور کیا جائے ،صدر مملکت کی جانب سے دو ارکان کا تقرر تعیناتی کے تحت نہیں آتا،

واضح رہے کہ چیف الیکشن کمشنر نے 2 نئے ارکان الیکشن کمیشن سے حلف لینے سے معذرت کرلی،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق چیف الیکشن کمشنرنےوزارت پارلیمانی امورکو فیصلے سے آگاہ کردیا،چیف الیکشن کمشنر کا کہنا ہے کہ نئےممبران کی تقرری آرٹیکل 213 اور 214 کےمطابق نہیں ہوئی،نئےممبران کی تقرری آئین کی خلاف ورزی ہے،

افسوس، پارلیمنٹ پر حملہ کر دیا گیا، رضا ربانی نے ایسا کیوں کہا؟

بلوچستان سے منیراحمدکاکڑ اور سندھ سے خالد محمود صدیقی کوالیکشن کمیشن کا ممبر لیا گیا ہے ،صدرمملکت کی جانب سےدونوں نئےارکان کی الیکشن کمیشن میں تقرری کی گئی ہے .

الیکشن کمیشن کی اراکین کی تقرری، مسلم لیگ ن بھی میدان میں آگئی، مریم اورنگزیب کا بڑا اعلان

واضح رہے کہ وزارت پارلیمانی امور نے بلوچستان اور سندھ کے الیکشن کمیش کے ممبران کی تقرری کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔ وزارت پارلیمانی امور نے بلوچستان اور سندھ کے ممبران کی تقرری کا نوٹی فکیشن جاری کردیا۔ منیر احمد کاکڑ کو بلوچستان سے جبکہ خالد محمود صدیقی کو سندھ سے الیکشن کمیشن کے ممبرمقرر کیا گیا ہے

الیکشن کمیشن کے دو ممبران کی تقرری، خورشید شاہ کا قانونی کاروائی کا اعلان

الیکشن کمیشن کے دو ممبران کی تقرری پرمسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے بھی شدیداحتجاج ریکارڈ کروایا تھا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.