fbpx

عید الفطر پر طویل چھٹیوں کے متحمل نہیں ہوسکتے حکومت فیصلے پر نظر ثانی کرے، دانش خان

عید الفطر پر طویل چھٹیوں کے متحمل نہیں ہوسکتے حکومت فیصلے پر نظر ثانی کرے، دانش خان
صنعتی پیداواری عمل مکمل طور پر بند ہونے سے برآمداتی اہداف کو حاصل کرنا نہائت دشوار ہوجائے گا، چیئرمین پلگمیا

کراچی:پاکستان لید رگارمنٹس مینوفیکچرراینڈ ایکسپورٹر ایسوسی ایشن (پلگمیا)کے چیئرمین دانش خان نے عید پر ہونے والی تعطیلات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کورونا کی موجودہ خطرناک صورتحال اور لاک ڈاؤن کے باعث تاجر وصنعتکار شدید معاشی بد حالی کا شکار ہوجائیں گے،لہذا عید کی منظور شدہ تعطیلات کے نوٹیفیکیشن پر نظر ثانی کرتے ہوئے اسے محدود کیاجائے تاکہ ایکسپورٹ سے وابستہ صنعتی شعبہ کی پیداواری سرگرمیاں متاثر نہ ہوں اور برآمد کنندگان کے آرڈر بروقت تکمیل کو پہنچ سکیں۔ دانش خان نے کہا کہ موجودہ خطرناک وباء کورونا کے با عث حکومت کی جانب سے عائد کی جانے والی ایس او پیش پر عمل درآمد کرتے ہوئے کاروباری سرگرمیاں بھی متاثر
ہیں۔

دانش خان نے وفاقی وصوبائی حکومت سے اپیل کی کہ موجودہ معاشی بحران سے نکلنے کے لیے صنعتوں کو مکمل طور پر فعال کرنے کے لیے اقدامات کیے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ عید پر چھٹیوں کی طویل بندش سے صنعتی سرگرمیوں پر منفی اثرات مرتب ہونے کے ساتھ برآمداتی اہداف کو حاصل کرنا نہائت دشوار ہوجائے گا۔چھٹیوں کے باعث دیہاڑی دار طبقہ، ہزاروں چھوٹے بڑے کارخانے اور فیکٹریاں بند ہونے سے پیداواری عمل مکمل طور پر بند ہوجائے گااور صنعتی و کاروباری سرگرمیاں معدوم ہوجائیں گی، جس سے بزنس کمیونٹی کے ساتھ ساتھ آبادی کا ایک بہت بڑا حصہ بھی اس سے براہ راست متاثر ہوگا۔ پلگمیا کے چیئرمین دانش خان نے کہا کہ ملک میں عید پر ہونے والی تعطیلات کے باعث پاکستان کو ملنے والے یورپی ممالک سمیت امریکہ اوردیگرریاستوں سے برآمدی آڈرز کی تکمیل میں بھی مشکلات کاسامنا کرنا پڑے گا جوکہ ملک وقوم دونوں کے لیے نقصان دہ ثابت ہوگا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو GSP پلس کا درجہ ملنے کے سبب برآمدی آرڈر کو بر وقت پورا کرنے کے لئے ضروری ہے کہ طویل تعطیلات کا خاتمہ ہو تاکہ صنعتی پیداواری سرگرمیوں میں نمایا ں اضافہ رونما ہو اور آرڈر کی ترسیل کو بر وقت ممکن بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ ملک میں عید پر ہونے والی تعطیلات کے باعث حکومتی خزانے اور غیر ملکی ترسیلات میں کمی کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔دانش خان کا مزید کہنا تھا کہ موجودہ معاشی صورت حال میں عید الفطر پر طویل چھٹیوں کے متحمل نہیں ہوسکتے.انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ ملک کی بزنس کمیونٹی کی رائے کو مقدم رکھتے ہوئے ملکی مفاد اور معیشت کی بہتری کے پیش نظر عید کی چھٹیوں پر نظر ثانی کرتے ہوئے موجود نو ٹیفیکیشن کو منسوخ کرے اور اسے 12 مئی تا 16 تک محدود کرے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.