fbpx

غیر ملکی سازش سے متعلق کوئی ثبوت نہیں ملا ، قومی سلامتی کمیٹی اجلاس میں بریفنگ

غیر ملکی سازش سے متعلق کوئی ثبوت نہیں ملا ، قومی سلامتی کمیٹی اجلاس میں بریفنگ
وزیراعظم شہبازشریف کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کا اعلامیہ جاری کر دیا گیا

ایجنسیوں نے قومی سلامتی کمیٹی کو بریفنگ دی اور کہا کہ غیر ملکی سازش سے متعلق کوئی ثبوت نہیں ملا ،جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اجلاس میں واشنگٹن سے پاکستانی سفارتخانے کے مراسلے کا جائزہ لیا گیا،سابق پاکستانی سفیر نے قومی سلامتی کمیٹی کو مراسلے سے متعلق بریفنگ دی،تمام سیکیورٹی ایجنسیز نے خط کا دوبارہ جائزہ لینے کے بعد متفقہ نتیجہ اخذ کیا ہے کہ کوئی بیرونی سازش نہیں ہوئی،اعلامیہ کے مطابق اجلاس میں گزشتہ قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے منٹس کی توثیق کی گئی، سیکیورٹی ایجنسیوں کی معلومات کے مطابق کوئی بیرونی سازش نہیں ہوئی،

امریکا میں پاکستان کے سابق سفیر اسد مجید نے قومی سلامتی کمیٹی کو بریفنگ دی اور بتایا کہ واشنگٹن میں پاکستانی سفارتخانے کو ٹیلی گرام موصول ہوا کمیٹی نے اس ٹیلی گرام پر تبادلہ خیال کیا ،اجلاس میں وزیر دفاع خواجہ آصف، وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ، وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب اور وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے شرکت کی وزیرمملکت برائے خارجہ حنا ربانی کھر اور سابق سفیر اسد مجید خان نے شرکت کی اجلاس میں جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی ، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ، ایئر چیف اور نیول چیف نے بھی شرکت کی

قبل ازیں وزیراعظم شہباز شریف کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس آج ہوا قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس وزیراعظم ہاؤس میں ہوا، شہباز شریف کے وزیراعظم منتخب ہونے کے بعد پہلی بار قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا،

قومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے بعد وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کا کہنا تھا کہ قومی سلامی کمیٹی اجلاس کا ایک جامع اعلامیہ جاری کیا گیا ہے وہ ہر چیز کو کور کرتا ہے اور وہ اعلامیہ یہ بتاتا ہے کہ یہ سازش کا جو ڈرامہ رچانے کی کوشش کی جارہی ہے اور لوگوں کو کنفیوز کیا جارہا ہے کوئی ایسی چیز نہیں تھی

تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے 27 مارچ کو اسلام آباد میں جلسے کے دوران ایک خط لہرا کر دکھاتے ہوئے دعویٰ کیا گیا تھا کہ ان کی حکومت کو گرانے کی سازش ایک بہت ہی طاقتور ملک کی جانب سے کی گئی

بعد ازاں اس معاملے پر دفتر خارجہ نے اسلام آباد میں تعینات امریکی ناظم الامور سے احتجاج کرتے ہوئے ڈی مارش بھی جاری کیا تھا عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے کامیاب ہونے کے بعد منتخب ہونے والے وزیراعظم شہباز شریف نے پہلی ہی تقریر میں قومی اسمبلی میں مبینہ دھمکی آمیز خط کی تحقیقات کے لیے قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس بلانے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ اگر بیرونی مداخلت ثابت ہو گئی تو وزارت عظمیٰ چھوڑ دوں گا

وزیراعظم کو دھمکی آمیز خط کس نے بھیجا؟ بحث جاری

دھمکی آمیز خط کونسی شخصیت کو دکھانا چاہتے ہیں؟ حکومت کا بڑا اعلان

وزیراعظم کو دھمکی آمیز خط کا معاملہ سپریم کورٹ پہنچ گیا

دھمکی آمیز خط ،وزیراعظم نے سینئر صحافیوں کو دکھانے کا اعلان کر دیا

دھمکی آمیز خط کے بارے تہلکہ خیز انکشافات سامنے آ گئے

قوم سے خطاب مؤخر،خط کس نے لکھا ؟کتنی سخت زبان،کیا پیغام،عمران خان نے سب بتا دیا

پیکنگ ہو گئی ،عمران خان کابینہ کے وزرا بیرون ملک بھاگنے کو تیار