fbpx

الیکشن کمیشن کے خلاف قراردادیں فارن فنڈنگ کیس پر اثر انداز ہونے کے لئے ہیں،فضل الرحمان

پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ اور جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن کے خلاف قراردادیں فارن فنڈنگ کیس پر اثر انداز ہونے کے لئے ہیں۔

الیکشن کمیشن کا فارن فنڈنگ کیس کا فیصلہ کل سنانے کا اعلان

چارسدہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ حکومت کی مدت پوری ہونے کے بعد مقررہ وقت پر انتخابات ہونگے،عمران خان اس ملک کی ایک بڑی برائی ہے جس کو جڑ سے نکالنا چاہئے، عمران اداروں کو بلیک میل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، پی ٹی آئی چیئرمین نے پنجاب ضمنی الیکشن میں کامیابی پر الیکشن کمیشن کا شکریہ ادا کیا تھا، اسی الیکشن کمیشن کے خلاف پنجاب اور کے پی اسمبلی سے قراردادیں منظور کروائیں، الیکشن کمیشن کے خلاف قراردادیں فارن فنڈنگ کیس پر اثر انداز ہونے کے لئے ہیں۔

 

اداروں کو برا بھلا کہنے والوں کے ساتھ چلنے کا سوچ بھی نہیں سکتا،چودھری شجاعت حسین

 

پی ڈی ایم کے سربراہ نے مزید کہا کہ ہمیں سپریم کورٹ پر اعتراض نہیں بلکہ سپریم کورٹ کے فیصلوں پر اعتراض ہے، اداروں کے سربراہان بھی انسان ہوتے ہیں جن سے غلطیاں ہوتی ہے، سپریم کورٹ سے بھی بعض فیصلوں میں غلطیاں ہوئی ہے، سپریم کورٹ کے ججز کی عدم دستیابی کی وجہ سے چیف جسٹس نے فل کورٹ بنانے سے انکار کیا، دو روز بعد سپریم کورٹ کے ججز کے انتخاب کے لئے چیف جسٹس نے جوڈیشل کمیشن کا اجلا س بلا لیا۔

ان کا کہنا تھا کہ چار سال تک ملک پر مسلط ٹولے نے معیشت کو تباہ و برباد کردیا، پاکستان کی معاشی صورتحال ٹھیک ہونے میں وقت لگے گا، عمران خان ٹولے کا صرف ایک کام باقی تھا اور وہ ریاست توڑنا تھی۔