آٹھ فروری،الیکشن کے نام پر سنگین مذاق تھا،عوام کی توہین کی گئی،سراج الحق

0
131
siraj

امیر جماعت اسلامی سراج الحق نےکہا ہے کہ پوری قوم جانتی ہے، کہ آٹھ فروری کو قوم کیساتھ سنگین مذاق کیا گیا،ایک لحاظ سے الیکشن کے نام پر عوام کی توھین کی گئی،

سراج الحق کا کہنا تھا کہ غریب قوم کے خزانے سے پچاس ارب روپے خرچ کیے گئے، آٹھ فروری کو لوگ ووٹ ڈالنے نکلے، لیکن نتیجہ قومی فیصلے کے خلاف نکلا، یہاں فیصلے پہلے ہوتے ہیں اور الیکشن بعد میں اس سے بڑا مذاق نہیں ہوسکتا ، یورپی یونین، فافن، اکانومسٹ اور دیگر نے تحفظات کا اظہار کیا، بین القوامی مبصرین نے الیکشن کو ڈرامہ قرار دیا، جب بھی عوامی مینڈیٹ کو بلڈوز کیا جاتا ہے تو ملکی جغرافیہ سلامت نہیں رہتا، ہم اور پوری قوم اس الیکشن کو مسترد کرتے ہیں، چیف الیکشن کمشنر نے شفاف الیکشن کا حلف اٹھایا تھا، لیکن چیف الیکشن کمشنر نے حلف کی پاسداری نہیں کی، پوری دنیا میں الیکشن کے بعد استحکام اتا ھے، لیکن یہاں انارکی میں اضافہ ہوا،انٹرنیٹ شٹ ڈاون کر کے غیر اعلانیہ ایمرجنسی نافذ کی گئی،کراچی میں لوگوں نے جماعت اسلامی پر اعتماد کیا، ہمارے چھ حلقے ہم سے چھین لیے گئے،ہمارے لوگوں کیساتھ ننانونے فیصد فارم پنتالیس ہیں، آج ہم الیکشن کمیشن گئے، اپنا حق لینے کے لیے طویل مہم چلانا پڑ رہی ہے

سراج الحق کا مزید کہنا تھا کہ یہ الیکشن فارم سنتالیس کا الیکشن ھے، قوم پنتالیس کا نتیجہ مانگ رہی ہیں ،رات بارہ بجے تک جیتا کوئی اور ھے اور پھر فاتح کوئی اور ہوتا ھے، گزشتہ الیکشن میں آر ٹی ایس ناکام ہوا، اب ای ایم ایس بیٹھ گیا ،اگر الیکشن اسی مذاق کا نام ھے تو یہ قابل برداشت نہیں، نواز شریف نے ووٹ کو عزت دو کا نعرہ لگایا پھر چھوڑا،

اسلام آباد میں خواتین کی حنیف عباسی،خواجہ سعد رفیق کے ساتھ بدتمیزی

آبائی نشست سے متوقع ہار ،نواز شریف افسردہ ،ماسک پہن کر ماڈل ٹاؤن سے روانہ،تقریر بھی رہ گئی

مخلوط حکومت کانام نہ لیں ایک پارٹی کی اکثریت ضروری ہے،نواز شریف

انتخابات ابھی تک تو پُر امن ہیں،نگران وزیراعظم

آر او کے دفاتر میں دھاندلی کی گئی، پولیس افسران معاون تھے،سلمان اکرم راجہ

سماعت سے محروم بچوں کے والدین گھبرائیں مت،آپ کا بچہ یقینا سنے گا

Leave a reply