رواں برس کورونا کے باعث ایمی ایوارڈز کی تقریب ورچوئل طور پر منقعد کی جائے گی، تقریب میں پہلی بار امریکی مسلم سیریز بھی نامزد

ٹی وی کے لیے دیئے جانے والے معروف ایمی ایوارڈز تفریحی صنعت کے ان چند محفلوں میں سے ایک ہے جو وبائی امراض کی وجہ سے منسوخ نہیں ہوئے ہیں مذکورہ ایوارڈ کی 72ویں تقریب رواں برس ورچوئل طور پر منقعد کی جائے گی۔

باغی ٹی وی : اطلاعات کے مطابق حال ہی میں ایمی ایوارڈز کی نامزدگیوں کا اعلان کیا گیا تھا تاہم اس وقت تقریب کو منعقد کرنے کے حوالے سے کوئی وضاحت نہیں کی گئی تھی۔

پہلے سے ہی چہ میگوئیاں جاری تھیں کہ کورونا کی وبا کے باعث رواں سال ریڈ کارپٹ منعقد نہیں کیا جائے گا اور کم لوگوں کو ایوارڈز تقریب کے لیے مدعو کیا جائے گا تاہم اب اس کی تصدیق بھی کردی گئی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز نے اپنی رپورٹ میں شوبز ویب سائٹ ورائٹی کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ ‘ایمی ایوارڈز’ کی انتظامیہ نے تقریب کو ورچوئل منعقد کرنے کی تیاریاں مکمل کرلیں ہیں اور تقریب کو ورچوئل طور پر 20 ستمبر کو ٹی وی اور ویب سائٹس پر آن لائن دکھایا جائے گا پھر بھی خیال کیا جا رہا ہے کہ کچھ افراد تقریب میں شرکت ضرور کریں گے۔

یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ تقریب میں شامل ہونے والی شوبز شخصیات ماضی کی طرح گلیمر لباس کے بجائے منفرد اور کورونا سے تحفظ دینے والے لباس میں شرکت کریں گے۔

1949 میں شروع کئے جانے والے ایوارڈز ایمی ایوارڈز کی نامزدگیوں کا اعلان کر دیا گیا ہے جس میں اسٹریمنگ ویب سائٹ نیٹ فلیکس کے ڈرامے 160 نامزدگیاں حاصل کر کے پہلے نمبر پر ہے-

رواں سال ایچ بی او 107 نامزدگیوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے، تاہم اسی ویب سائٹ کا ڈرامہ ’واچ مین‘ 26 نامزدگیوں کے ساتھ سرفہرست ہے۔

دوسرے نمبر پر ویب اسٹریمنگ ایمازون کا پرانا 1960 کا کامیڈی ڈراما ’دی مارولس، مسز میسلز‘ ہے، جس نے 20 نامزدگیاں حاصل کیں۔

تیسرے نمبر پر نیٹ فلیکس کا ڈرامہ ’اوزارک‘ ہے، جس نے 18 نامزدگیاں حاصل کیں۔

’ایمی ایوارڈز‘ انتظامیہ کی جانب سے مجموعی طور پر 26 مختلف مین کیٹیگریز میں ایوارڈز دیے جاتے ہیں جن کی مزید ذیلی کیٹیگریاں ہوتی ہیں جن میں بہترین اداکارہ، اداکار، ہدایت کار، معاون اداکارہ، اداکار، ڈراما سیریل، کامیڈی، ایکشن اور میوزک سمیت دیگر کیٹیگریز شامل ہیں اس طرح ذیلی کیٹیگریز کی تعداد 90 تک ہوجاتی ہے۔

رواں سال پہلی بار ’ایمی ایوارڈز‘ کی نامزدگیوں میں لچک دکھائی گئی ہے اور ہر عمر، رنگ اور نسل کی خواتین کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

جبکہ دلچسپ بات یہ ہے کہ ایمی ایوارڈ کی تاریخ میں پہلی بار کسی امریکی مسلم کامیڈی سیریز کو بھی نامزد کیا گیا ہے اور یہ اعزاز ’رامی‘ کے حصے میں آیا ہے۔

’رامی‘ میں رامی یوسف کا مرکزی کردار ادا کرنے والے رامی یوسف کو کامیڈی سیریز میں بہترین لیڈ اداکار اور بہترین ڈائریکشن کیلئے نامزد کیا گیا۔

سیزن ٹو میں رامی یوسف کے مد مقامل مہرشالا علی کو کامیڈی سیریز میں بہترین سپورٹنگ رول کیلئے نامزد کیا گیا ہے ’رامی‘ امریکی مسلم پہلی سیریز ہے جو ایمی ایوارڈز میں جگہ بنانے میں کامیاب رہی ہے۔

View this post on Instagram

الحمدلله 🙏🏽🙏🏽🙏🏽

A post shared by ramy youssef (@ramy) on


رامی یوسف نے اپنے انسٹاگرام پر نامزدگی کی خبر شیئر کرتے ہوئے اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کرتے ہوئے’الحمداللہ‘ لکھا۔

یاد رہے کہ رواں برس منعقد کیے جانے والے گولڈن گلوب ایوارڈز میں بہترین مزاحیہ اداکار کا ایوارڈ کامیڈی سیریز ’رامی‘ میں بہترین اداکاری کے جوہر دکھانے پر عرب نژاد امریکی اداکار رامی یوسف کو دیا گیا تھا-

کورونا وائرس: فلمی دنیا کے سب سے معتبر ایوارڈ کی تقریب 2 ماہ کے لئے موخر

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.