عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد فردوس عاشق اعوان نے کیا بڑا اعلان

عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد فردوس عاشق اعوان نے کیا بڑا اعلان

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم کی سابق معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد خود میدان میں آ گئیں

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ⁦عمران خان کا شکریہ۔انہوں نے مجھ پر اعتماد کیا۔1 سال کے عرصے میں اپنی بھرپور صلاحیتوں سے فرائض سر انجام دینے کی کوشش کی۔ وزیراعظم کا استحقاق ہے کہ ٹیم کے کس کھلاڑی کو کونسے بیٹنگ آرڈر یا کونسی فیلڈ پوزیشن پر کھلانا ہے۔میں ان کے فیصلے کا احترام کرتی ہوں۔

فردوس عاشق اعوان کا مزید کہنا تھا کہ وزارت سے ہٹائے جانے کے حوالے سے میڈیاپرچلنے والی من گھڑت خبروں میں لگائے گئے بے بنیادالزامات کی سختی سے تردیدکرتی ہوں۔سیاسی کارکن کی حیثیت سےمیرانصب العین ملک کی ترقی اورعوام کی فلاح ہے۔جووزیراعظم عمران خان کی قیادت میں جاری رکھاجائےگا۔

واضح رہے کہ وزیراعظم کی مشیر برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

فردوس عاشق اعوان کی جگہ سابق ڈی جی آئی ایس پی آر عاصم سلیم باجوہ کو وزیراعظم عمران خان کا معاون خصوصی برائے اطلاعات تعینات کر دیا گیا ہے

سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹر شبلی فراز کو وفاقی وزیر اطلاعات کا عہدہ دیدیا گیا ہے۔ عہدے سے ہٹائے جانے کی اندرونی وجوہات سامنے آ گئی.فردوس عاشق اعوان پر حکومتی اشتہاری بجٹ سے 10 فیصد کمیشن لینے اور مالی ہیر پھیر کے الزامات لگائے گئے ہیں ,فردوس عاشق اعوان نے3 سرکاری گاڑیاں گھریلو استعمال کیلئے لے رکھی تھیں جسکی بطور معاون خصوصی انہیں اجازت نہیں تھی.فردوس عاشق اعوان نے سرکاری خرچ پر غیر قانونی طور پر 11 ملازم اپنے گھریلو استعمال کیلئے رکھے ہوئے تھے، مالی اور خاکروب بھی پاکستان ٹیلی ویژن کے بجٹ سے اپنے ذاتی استعمال میں رکھے ہوئے تھے.اپنے اختیارات کاناجائز استعمال کرتے ہوئے پی ٹی وی میں اپنے اہل و عیال کی نا جائز بھرتیاں کیں.

فردوس عاشق اعوان "فارغ” سابق ڈی جی آئی ایس پی آر وزیراعظم کے معاون برائے اطلاعات مقرر

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.